جمعرات17؍ شعبان المعظم 1442ھ یکم اپریل 2021ء

قد بڑھانے والی غذائیں اور ورزشیں کونسی ہیں؟

لمبا قد کسے نہیں پسند، قد لمبا ہو تو انسان خود کو پر اعتماد محسوس کرتا ہے جبکہ لمبے قد کی بدولت شخصیت بھی خوبصورت نظر آتی ہے،  پست قد کے افراد چند آسان تدابیر اپنا کر اپنے قد میں اضافہ کر سکتے ہیں۔

مارکیٹ میں آج کل قد لمبا کرنے کے حوالے سے طرح طرح کے جوتے، ادویات اور ٹانک دستیاب ہیں جن کا دعویٰ ہے کہ ان مصنوعات کے استعمال سے مطلوبہ قد حاصل کیا جا سکتا ہے، ان مصنوعات کے ذریعے قد لمبا ہونے کی سو فیصد ضمانت تو نہیں دی جاسکتی مگر چند ورزشوں کو اپنانے اور اپنی روز مرہ کی روٹین میں مثبت تبدیلیاں لا کر اپنا من پسند قد حاصل کیا جا سکتا ہے۔

قد بڑھانا ممکن بھی ہے یا نہیں ؟

طبی ماہرین کے مطابق نیند کے دوران قد بڑھنے کا عمل متحرک ہوجاتا ہے، سائنسی تحقیق کے مطابق کمر کے بل دس منٹ لیٹنے سے قد میں پانچ ملی میٹر کا اضافہ ہوتا ہے، دن بھر میں ریڑھ کی ہڈی سکڑتی ہے اور لیٹنے کے بعد وہ اپنی اصل شکل میں واپس آ جاتی ہے۔

اپنے قد کی لمبائی کو بڑھانے کے لیے چند مخصوص ورزشوں اور غذاؤں کے ذریعے کسی حد تک قد میں اضافہ کیا جا سکتا ہے جبکہ 25 سال سے زائد عمر کے افراد میں قد کے بڑھنے کے امکانات بہت کم ہو جاتے ہیں۔

قد بڑھانے کے لیے درج ذیل بتائی گئی غذاؤں کے استعمال اور ورزشوں کے اپنانے سے 25 سال تک کی عمر کے افراد فوائد حاصل کر سکتے ہیں جبکہ 25 سال کے افراد یا اس سے زائد عمر کے افراد کو کچھ خاص نتائج حاصل نہیں ہوں گے۔

لمبے قد کے خواہشمند افراد مندرجہ ذیل تجویز کی گئیں کچھ ٹِپس کے ذریعے اپنا قد کچھ حد تک بڑ ھا سکتے ہیں۔

قد بڑھانے کے خواہشمند افراد کے لیے سب سے زیادہ اہمیت مثبت غذا کو دی جاتی ہے،  قد بڑھانا چاہتے ہیں تو اپنی روز مرہ کی غذا میں کیلشیئم، آئرن، وٹامن ڈی سمیت دیگر وٹامنز اور منرلز کی موجودگی کو ناگزیر بنا لیں جبکہ خود کو دماغی طورپر پُرسکون رکھیں اور دن میں کم از کم 8 گھنٹے نیند پوری کریں۔

قد بڑھانے کے لیے انڈوں کا استعمال  

انڈے وٹامن B12 اور پروٹین سے بھرپور ہوتے ہیں جس کی وجہ سے قد بڑھنے میں مدد ملتی ہے،  غذا میں انڈا شامل کرنا بہت ضروری ہے۔

مرغی کا گوشت کھائیں

چکن میں موجود پروٹین وٹامن بی 12، نیاسین ، سیلینیم ، فاسفورس اور امائنو ایسڈز پائے جاتے ہیں جو تحقیق کے مطابق قد بڑھانے میں مدد گار ہیں۔ اسی لیے ہفتے میں ایک بار مرغی ضرور کھائیں۔

فائبر سے بھر پور غذائیں

ایسی غذائیں جن میں فائبر کی وافر مقدار موجود ہو وہ کھائی جائیں جیسے کہ جو کا آٹا، باجرہ، مکئی، کیلے ان میں فائبر کے ساتھ آئرن، میگنیشیم اورسیلینم پایاجاتا ہے جو کہ قد لمبا کرنے میں مدد دیتا ہے۔

مچھلی

مچھلی میں اومیگا تھری، وٹامن ڈی اور پروٹین پایا جاتا ہے جس کا استعمال قد کو بڑھانے کا کام انجام دیتا ہے.

دہی

دہی میں کئی اہم غذائی اجزا کیلشیم، میگنیشیم، فاسفورس اور پوٹاشیم پائے جاتے ہیں جو تحقیق کے مطابق مدافعتی فنکشن کو بہتر بنانے اور قد کو بڑھانے کا اہم کام سرانجام دیتے ہیں۔

بادام

بادام میں وٹامنز، معدنیات، فائبر ، مینگنیز اور میگنیشیم کی مقدار پائی جاتی ہے جو جسم کو نہ صرف بڑھانے کا کام کرتے ہیں بلکہ ذہن کو بھی تیز بناتا ہے۔

سبزیاں اور پھل

تازہ پھل کھانے کی عادت ڈالیں کیونکہ ان میں وٹامن اے، سی، ڈی، کیلشیم، کاربوہائیڈریٹس اور پوٹاشیم کی مطلوبہ مقدار پائی جاتی ہے جوکہ قد کو بڑھانے کے لیے اہم ترین اجزا ہیں۔

دودھ

دودھ میں موجود کیلشیم اور وٹامن ڈی ہڈیوں کو مضبوط بنانے کے ساتھ انہیں بڑھنے میں بھی مدد دیتا ہے، دودھ میں موجود وٹامن اے کی وجہ سے ہڈیاں زیادہ بہتر طریقے سے کیلشیم جذب کرتی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ دودھ قد بڑھانے میں مفید ثابت ہوتا ہے۔

شکر قندی

شکر قندی خاص طور پر وٹامن اے سے مالا مال ہیں جو ہڈیوں کی صحت کو بہتر بنانے کے ساتھ قد کو بڑھانے میں مدد دیتی ہے، ان میں وٹامن سی، مینگنیز، وٹامن بی 6 اور پوٹاشیم پایا جاتا ہے جو جسمانی ڈھانچے کو قدرتی طور پر بڑھاتا ہے۔

سائیکل چلائیں

قد لمبا کرنے کے خواہشمند افراد اپنی روٹین میں سائیکل چلانے کی عادت بنا لیں، سائیکل چلانے کے دوران سائیکل کی سیٹ کو اس طرح سے فکس کریں کے ٹانگوں کو پیڈل تک پہنچنے کے لیے زیادہ کھینچنا پڑے، سائیکل کی سیٹ کو اتنا بھی اوپر نہ رکھیں کے جوڑوں سے متعلق کوئی مشکل پیش آنے لگے ۔

کسی راڈ کی مدد سے لٹکیں

قد بڑھانے کے لیے یہ ایک سستہ اور آسان ترین طریقہ ہے، کسی بھی لوہے کی راڈ یا کسی بھی مضبوط چیر کو پکڑیں اور پر لٹک جائیں، جتنی دیر ہو سکے خود کو لٹکا کر رکھیں، دن بہ دن لٹکنے کے وقت کو بڑھائیں، لٹکنے سے قد لمبا، ریڑھ کی ہڈی اور پیٹ کے پٹھے مضبوط ہوتے ہیں ۔

کندھوں اور سر کے بل کھڑے ہونا

کمر کے بل زمین پر لیٹیں، اب سر اور کندھوں کو زمین پر ٹکاتے ہوئے باقی سارے جسم کو ہوا میں اُٹھا لیں، اس ورزش کے لیے ٹانگوں کو جسم کی سیدھ میں رکھنا ضروری ہے ورنہ غیر متوازن ہوکر گرنے سے کسی چوٹ کے لگنے کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔

کوبرا یوگا

کوبرا یوگا کے لیے پیٹ کے بل زمین پر لیٹیں جائیں اور اب ہاتھ زمین پر رکھیں اور جسم کا اگلا حصہ یعنی سر اور سینہ اوپر کی جانب سے جائیں ، اس سے بازؤوں اور پیٹ کے پٹھوں پر کھنچاؤ آئے گا ، یہ ورزش کولہوں، پیٹ ، بازو اور کمر پٹھوں کے لیے بھی نہایت مفید ہے ۔

وی شیپ یوگا

اس ورزش کے لیے سیدھا کھڑے ہو جائیں، اب نیچے کی جانب جھکتے ہوئے دونوں ہاتھوں سے زمین کو چھونے کی کوشش کریں، اس دوران سر اور جسم گھٹنوں کے قریب رکھیں، شروعات میں خود پر زیادہ کھنچاؤ نہ پیدا کریں، دن بہ دن زمین کو جتنا ہو سکے جھُک کر چھوئیں ۔

رسی کودنا

رسی کودنا قد بڑھانے سمیت وزن میں کمی کا بھی سبب بنتی ہے، قد بڑھانے کے لیے رسی کودنے کو بہترین ورزش قرار دیا جاتا ہے ، کسی رسی کی مدد سے ہوا میں اُچھلیں، اس ورزش سے ہڈیاں اور پٹھے مضبوط ہوتے ہیں جبکہ وقت گزرنے کے ساتھ قد میں کسی حد تک اضافہ بھی ہوتا ہے۔

تیراکی کرنا

تیراکی قد بڑھانے والی ورزشوں میں سب سے بہترین سمجھی جاتی ہے، پانی کے اندر ریڑھ کی ہڈی کے مہروں پر بوجھ بہت کم ہوتا ہے جبکہ جوڑ زیادہ کُھل کر آرام دہ حالت میں ورزش کر پاتے ہیں، جس سے قد کے بڑھنے کے عمل میں تیزی آتی ہے اور آسانی بھی پیدا ہوتی ہے۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.