ہفتہ25؍رمضان المبارک 1442ھ 8؍ مئی 2021ء

بالوں کو جڑوں سے کمزور کرنیوالی خُشکی کا آسان علاج

سر میں خشکی مرد و خواتین دونوں میں عام ہے، یہ اُس وقت تکلیف کا باعث  بننے لگتی ہے جب اس کے سبب  بال جڑوں سے  جھڑنے لگتے ہیں اور سر میں بار بار خارش ہوتی ہے، کسی محفل میں موجود سر میں کھجانے کے نتیجے میں انسان کو شرمندگی کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے۔

سر میں خُشکی کی وجوہات کیا ہیں؟

سر میں خُشکی کی سب سے بڑی وجہ شیمپو کا زیادہ استعمال اور گرم پانی سے نہانا ہے، شیمپو میں پائے جانے والے کیمیکلز ہماری جلد کے لیے نقصان دہ ہوتے ہیں، اِس کے علاوہ ہر وقت سر کو ڈھانپ کر رکھنے سے بھی خُشکی پیدا ہوتی ہے۔

بالوں کو صاف نہ رکھنے کے سبب سر میں خُشکی کی پیداوار ہوتی ہے اور ذہنی دباؤ بھی خُشکی کی ایک بڑی وجہ ہے۔

سر میں خُشکی کی علامات کیا ہیں:

سر میں خُشکی کی سب سے عام علامت خارش ہے جو اِس قدر ہوتی ہے کہ لوگوں کے سامنے شرمندہ ہونے پر مجبور کر دیتی ہے۔

خُشکی کی واضح علامت یہ بھی ہے کہ سر کی جلد پر فنگس پائی جاتی ہے جو دھوپ میں چمکتی ہے، بعض اوقات خُشکی ہمارے کپڑوں پر بھی گِرتی ہے اور گہرے رنگ کے لباس پر یہ زیادہ واضح ہوتی ہے۔

سر کی خُشکی ختم کرنے کے لیے مرد و خواتین مہنگے مہنگے اینٹی ڈینڈرف شیمپو اور کیمیکلز کا استعمال کرتے ہیں لیکن یہ کم ہونے کے بجائے اور  بڑھنے لگتی ہے۔

خُشکی سے نجات حاصل کرنے کا سر فہرست علاج یہ ہے کہ اپنے بالوں کی جڑوں سے صفائی رکھی جائے، اس کے علاوہ خشکی سے نجات حاصل کرنے کے لیے چند آزمودہ ٹوٹکے مندرجہ ذیل ہیں۔

لیموں میں قُدرتی طور پر سیٹرک ایسڈ پایا جاتا ہے جو سر سے خُشکی کے ذرّات کو نکالنے میں مدد کرتا ہے، خُشکی سے نجات پانے کے لیے لیموں کے رس کا استعمال اِس طرح سے کیا جائے کہ ہر بار نہانے سے قبل روئی لے کر اُس کو لیموں کے رس میں بھگوئیں اور سر کی جِلد پر جہاں جہاں خُشکی ہے وہاں لگائیں اِس عمل سے خُشکی ختم ہونے میں مدد ملے گی۔

ناریل کا تیل

ناریل کا تیل سر کی خُشکی ختم کرنے کا ایک موثر علاج ہے، ناریل کے تیل سے خُشکی ختم کرنے کے لیے پہلے اپنے حساب سے ناریل کے تیل کی مقدار لے کر اُس کو ہلکا گرم کرلیں اور پھر اُس میں لیموں کا رس مِلا لیں، اِس کے بعد اِس تیل کو اپنے سر کی جِلد پر لگائیں اور تھوڑی دیر مساج کریں، یہ عمل سر کی خُشکی ختم کرنے میں مفید ہے۔

اسپرین

اسپرین ایسے کیمیکل (سیلی کائیلیک ایسڈ) سے بھرپور دوا ہے جو بیشتر خشکی سے نجات دلانے والے شیمپوز کا حصہ ہوتا ہے۔

اسپرین کی 2 گولیوں کو پیس کر سفوف بنا لیں اور سر پر لگانے کے لیے جتنا شیمپو لیتے ہیں اس میں شامل کرلیں، اس مکسچر کو اپنے بالوں پر ایک سے دو منٹ تک لگا رہنے دیں اور پھر اچھی طرح دھولیں۔

اس کے بعد پھر دوبارہ سادہ شیمپو سے سر کی جلد کو دھولیں، خشکی کے خاتمے کے لیے اسپرین کے استعمال کے نتائج حیران کُن ثابت ہوتے ہیں۔

نیم کا تیل

نیم میں قُدرتی طور پر اینٹی بیکٹیریل خصوصیات موجود ہوتی ہیں اور اِس کا تیل سر سے خُشکی ختم کرنے میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے، جن لوگوں کو خُشکی ہوتی ہے اُن کو چاہیے کہ نیم کے تیل کا مساج کریں اِس سے خُشکی سے چھٹکارا مِل جائے گا۔

پیاز کا رس

پیاز میں اینٹی فَنگل خصوصیات پائی جاتی ہیں جو سر کی خُشکی جیسے فنگس کو ختم کرتی ہے، اِس کے لیے آپ پیاز لے کر اُس کا رس نِکال لیں اور پھر اُس رس کو سر کے اُس حصے پر لگالیں جہاں خُشکی اور فنگس کے ذرات موجود ہیں، اِس نسخے سے جلد ہی خُشکی سے نجات مِل جائے گی۔

کھانے کا سوڈا

کھانے کا سوڈا ہر گھر کے باورچی خانے کا اہم جز ہوتا ہے، اِس میں موجود اینٹی فنگس خصوصیات سر کی جِلد سے خُشکی ختم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اس کا طریقہ استعمال یہ ہے کہ پہلے اپنے بالوں کو گیلا کرلیں اور سر کی جلد پر کھانے کا سوڈا لگائیں، اِس کے بعد اپنے ہاتھ سے رگڑیں اور کُچھ دیر کے لیے چھوڑ دیں، کُچھ دیر کے بعد اپنے سر کو صرف پانی سے دھولیں، شروع میں آپ کو اپنے بال خُشک لگیں گے لیکن بعد میں آپ کو محسوس ہوگا کہ آپ کے سر کی جِلد پر قُدرتی تیل پیدا ہورہا ہے اور خُشکی ختم ہو رہی ہے۔

آملے کا استعمال 

آملہ بالوں کے لیے بہت مفید ہوتا ہے، خُشکی کی وجہ سے سر میں بہت زیادہ خارش ہوتی ہے اِس خارش سے نجات پانے کے لیے آملہ اپنے سر پر لگائیں اور زیادہ اچھا ہوگا کہ اپنے بالوں کو شیمپو کے بجائے آملہ کے پاؤڈر سے دھوئیں، اِس سے خُشکی بھی ختم ہوگی اور خُشکی کی وجہ سے بال جھڑنے کا عمل بھی رُُُک جائے گا۔

سیب کا سرکہ

ماہرین کے مطابق سیب کا سرکہ سر کی خشکی کا بہترین حل ہے کیونکہ اس میں پائی جانے والی تیزابیت سر میں چکناہٹ کا خاتمہ کرتی ہے جس کے نتیجے میں دوبارہ خشکی پیدا ہونا مشکل ہوجاتا ہے۔ 

ایک چوتھائی کپ سرکے کو چوتھائی کپ پانی سے بھری اسپرے بوتل میں شامل کریں اور اپنے سر پر چھڑکاﺅ کریں، اس کے بعد اپنے سر پر تولیہ لپیٹ لیں اور پندرہ منٹ سے ایک گھنٹے تک اس محلولو کو سر پر لگا رہنے دیں۔

بعد ازاں سر کو معمول کے مطابق دھولیں، یہ عمل ہفتے میں دو بار دہرانے سے  خشکی کو ہمیشہ کے لیے بھگا دے گا۔

انڈے کی زردی

انڈے کی زردی میں اینٹی ڈینڈرف خصوصیت موجود ہوتی ہیں، انڈ ے کی زردی سر کی جلد پر لگانے سے خارش بھی ختم ہوگی اور اِس کے علاوہ خُشکی سے بھی نجات ملے گی۔

ایلو ویرا جیل

ایلو ویرا وٹامنز، پروٹین اور معدنیات کی خصوصیات سے مالا مال ہے اور اس میں اینٹی فنگل اور اینٹی بیکٹیریل خصوصیات بھی پائی جاتی ہیں، ایلو ویرا سے سر کی خُشکی ختم کرنے کا طریقہ یہ ہے کہ خُشکی والے حصوں پر ایلو ویرا جیل لگالیں اور کُچھ دیر کے لیے چھوڑ دیں، پھر سر کو دھولیں، اِس سے خُشکی ختم ہوجائے گی۔

لہسن کا پیسٹ

لہسن میں اینٹی فنگل، اینٹی بیکٹیریل اوراینٹی بائیوٹیک خصوصیات ہوتی ہیں، لہسن کے ذریعے سر سے خُشکی ختم کرنے کا طریقہ یہ ہے کہ لہسن کو پیس کر اس کا پیسٹ بنا لیں، اب اسے سر کی جلد پر لگالیں اور پھر کُچھ دیر بعد دھولیں، خُشکی سے نجات مل جائے گی۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.