جمعہ20؍ رجب المرجب 1442ھ 5؍مارچ2021ء

رواں سال پاکستان کے FATF کی گرے لسٹ سے نکلنے کی قوی امید

پاکستان کے سالِ رواں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF) کے گِرے لسٹ سے نکلنے کی قوی امید ہے۔

پاکستان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF) کو دہشت گردی، انتہا پسندی اور منی لانڈرنگ کے انسداد کے قابلِ ذکر اقدامات میں پیش رفت پر اپنی تازہ رپورٹ بھجوا دی ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کے 27 نکات پر عمل درآمد مکمل کرنے اور باقی ماندہ 6 نکات پر جاری پیش رفت کو جلد مکمل کرنے کی یقین دہانی کروا دی ہے، پاکستان کو ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکالے جانے سے متعلق اس سال اچھی خبر آنے کی قوی امید ہے۔

ذرائع نے ’جیو نیوز‘ کو ایف اے ٹی ایف کےساتھ تازہ ترین رابطوں کے بارے میں بتایا ہےکہ پاکستان کا نام اسی سال گرے لسٹ سے نکلنے کے حوالے سے ایف اے ٹی ایف سے اچھی خبر آنے کی امید پیدا ہو گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کے درمیان دو تین ہفتے قبل 1 روزہ فیس ٹو فیس مذاکرات بھی ہوئے جن میں پاکستانی وفد کی قیادت وفاقی وزیر حماد اظہر نے کی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے 27 میں سے 21 نکات پر مکمل عمل درآمد کیئے جانے کے دستاویزی ثبوت حکام کے حوالے کر دیئے ہیں جبکہ باقی ماندہ 6 نکات پر اہم پیش رفت کی یقین دہانی کروا دی ہے جس کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ ان 6 نکات کے 50 سے 70 فیصد امور پر عمل مکمل ہو چکا ہے۔

حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان پر جامع اور بھرپور عمل درآمد کر رہا ہے، پاکستان نے دہشت گردوں کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ روکنے کے لیے قانون سازی کی، دہشت گردوں کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات کیئے گئے جس کا ایف اے ٹی ایف نے اعتراف بھی کیا ہے۔

حکام کے مطابق گزشتہ 2 سال کے دوران پاکستان نے ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان پر تیزی سے عمل درآمد کیا ہے، پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کی تمام 27 شرائط پر مکمل یا جزوی عمل درآمد کر لیا ہے اور 27 میں سے کوئی بھی شرط نامکمل نہیں رہی۔

حکام کے مطابق جنوری 2019ء میں پاکستان نے صرف ایک شرط پر مکمل، ایک پر جزوی عمل درآمد اور 25 شرائط نامکمل تھیں، جبکہ جون 2019ء میں پاکستان نے 2 شرائط پر مکمل، 12 پر جزوی عمل درآمد اور 12 شرائط نا مکمل تھیں۔

اسی طرح اکتوبر 2019ء میں پاکستان نے 5 شرائط پر مکمل، 17 پر جزوی عمل درآمد اور 5 شرائط نامکمل تھیں جبکہ فروری 2020ء میں پاکستان نے 14 شرائط پر مکمل، 11 پر جزوی عمل درآمد اور 2 شرائط نامکمل تھیں۔

اکتوبر 2020ء میں پاکستان نے 21 شرائط پر مکمل اور 6 شرائط پر جزوی عمل درآمد کیا اور کوئی بھی شرط نامکمل نہیں رہی۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.