منگل28رمضان المبارک 1442ھ 11؍مئی2021ء

ڈسکہ کے ضمنی انتخاب میں دھاندلی کی ذمہ دار پی ٹی آئی ہے، سروے

ڈسکہ کے ووٹرز نے 19 فروری کو این اے 75 میں ہوئےضمنی انتخاب میں دھاندلی کا سب سے زیادہ ذمہ دار پاکستان تحریک انصاف کو قرار دیا۔

سروے میں ووٹر ز نے دوسرے نمبر پر پاکستان مسلم لیگ ن کو دھاندلی کا ذمے دار قرار دیا ہے۔

ایپسوس کے سروے میں 47 فیصد نے پی ٹی آئی اور 12 فیصد نے پاکستان مسلم لیگ ن کو ذمہ دار ٹھہرایا۔

پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں 36 فیصد نے تحریک انصاف اور 24 فیصد نے ن لیگ پر انگلی اٹھائی۔

گیلپ پاکستان کے سروے میں 32 فیصد نے پی ٹی آئی اور 12 فیصد نے ن لیگ کو دھاندلی کا ذمہ دار کہا۔

ڈسکہ میں دوبارہ ضمنی انتخاب میں پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں 52 فیصد ووٹرز ن لیگ اور 40 فیصد پی ٹی آئی کو ووٹ دینے کے حامی ہیں ۔

ایپسوس سروے میں 67 فیصد اور گیلپ پاکستان کے سروے میں 60 فیصد نے ڈسکہ میں دوبارہ ضمنی الیکشن کروانے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے کی حمایت کی۔

پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں 40 فیصد نے دوبارہ انتخاب کی مخالفت کی۔

سروے میں این اے 75 ڈسکہ کے 3 ہزار سے زائد ووٹرز کی رائے شامل کی گئی۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.