منگل28رمضان المبارک 1442ھ 11؍مئی2021ء

پنجاب حکومت کا احتجاجی ملازمین کیخلاف سخت ایکشن کا فیصلہ

پنجاب حکومت نے احتجاج کرنے والے سرکاری ملازمین کے خلاف سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کر لیا۔

پنجاب حکومت کی جانب سے اس حوالے سے اعلیٰ حکام کو خط ارسال کیا گیا ہے۔

پنجاب حکومت نے خط کے ذریعے احتجاج کرنے والے سرکاری ملازمین کے خلاف سخت ایکشن لینے کے احکامات جاری کیئے ہیں۔

دوسری جانب وفاقی سرکاری ملازمین اور حکومت میں کامیاب مذاکرات ہونے کے باوجود دھرنا آج بھی جاری ہے۔

اسلام آباد میں سرکاری ملازمین سیکریٹریٹ سے باہر نکل کر سیکریٹریٹ چوک پر جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

ملازمین کو پارلیمنٹ کی طرف جانے سے روکنے کیلئے پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے جبکہ ان کی پیش قدمی روکنے کیلئے رینجرز بھی موجود ہے۔

سیکریٹریٹ ملازمین نے آج دوبارہ احتجاج کرتے ہوئے سیکریٹریٹ کا داخلی راستہ بند کر دیا ہے۔

ملازمین اپنے گرفتار ساتھیوں کی رہائی اور نوٹی فکیشن کے اجراء تک احتجاج جاری رکھنے پر قائم ہیں۔

گزشتہ روز اسلام آباد میں حکومت اور سرکاری ملازمین کے درمیان مذاکرات کامیاب ہو گئے تھے۔

حکومت کی جانب سے گریڈ 1 سے 22 تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد اضافے کی یقین دہانی کرائی گئی تھی، جس کا نوٹیفکیشن آج جاری ہوگا۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.