جمعرات5؍رجب المرجب 1442ھ18؍فروری 2021ء

شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کی اہلیہ ایک سال بعد منظرعام پر

شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کی بیوی ایک سال بعد عوام کے سامنے

کم ان اور ان کی بیوی ری کنسرٹ پر ہنستے مسکراتے ہوئے نظر آئے

کم ان اور ان کی بیوی ری کنسرٹ پر ہنستے مسکراتے ہوئے نظر آئے

شمالی کوریا کے سرکاری میڈیا کے مطابق شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کی اہلیہ ایک سال کے دوران پہلی بار عوام کے سامنے آئی ہیں۔

کم جونگ ان کی اہلیہ ری سول جو نے منگل کو اپنے شوہر کے ساتھ ایک کنسرٹ دیکھا جو کم جونگ ان کے مرحوم والد اور سابق رہنما کم جونگ اِل کی سالگرہ کے موقع پر منعقد کیا گیا تھا۔

ری سول اکثر ماضی میں اپنے شوہر کے ساتھ اہم تقریبات میں نظر آتی تھیں، لیکن پچھلے سال جنوری کے بعد سے انھیں نہیں دیکھا گیا تھا۔

ان کی عدم موجودگی کی وجہ سے ان کی صحت یا ممکنہ طور پر حاملہ ہونے کے بارے میں قیاس آرائیاں جنم لے رہی تھیں۔

اطلاعات کے مطابق شمالی کوریا کی نیشنل انٹیلیجنس سروس نے منگل کو کانگریس کے اراکین کو بتایا کہ ری وبا کی تشویش کی وجہ سے عوامی مقامات پر جانے سے پرہیز کر رہی تھیں اور زیادہ وقت اپنے بچوں کے ساتھ گزار رہی تھیں۔

اگرچہ شمالی کوریا نے سرکاری طور پر کووڈ۔19 کا کوئی بھی کیس رپورٹ نہیں کیا ہے لیکن ماہرین کہتے ہیں کہ ایسا ناممکن ہے۔

یہ بھی پڑھیئے

کنسرٹ پر کسی نے بھی ماسک نہیں پہنا ہوا تھا

کنسرٹ پر کسی نے بھی ماسک نہیں پہنا ہوا تھا

اخبار روڈونگ سن من کے مطابق جوڑا جب مانسوڈے آرٹ تھیئٹر میں داخل ہوا تو لوگوں نے ان کا پرزور استقبال کیا۔

تصاویر میں دونوں ہنستے مسکراتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔ تاہم تھیئٹر میں شاید ہی کوئی شخص ہو جس نے ماسک پہنا ہو۔

Presentational grey line

ری سول جو کون ہیں؟

تجزیہ کار چیونگ سیونگ-چانگ کے مطابق ری سول جو ایک اعلیٰ گھرانے سے تعلق رکھتی ہیں اور ان کے والد پروفیسر جبکہ والدہ ایک اوبسٹیٹریئشن ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ری، جن کی عمر 31 سال ہے، پہلے انہاسو آرکیسٹرا میں ایک گلوکارہ ہوا کرتی تھیں۔ یہ فنکاروں کا ایک مشہور گروہ ہے جس کے اراکین ریاست چنتی ہے۔

مسٹر چیونگ کا مزید کہنا ہے کہ خیال کیا جاتا ہے کہ جو نے شمالی کوریا کے رہنما سے 2009 میں شادی کی تھی۔ یہ شادی جلدی میں کی گئی تھی کیونکہ سنہ 2008 میں کم جونگ ان کے والد کم جونگ اِل فالج کا شکار ہو گئے تھے۔

جنوبی کوریا کی انٹیلیجنس کے مطابق جوڑے کے تین بچے ہیں۔

Presentational grey line

سابق امریکی باسکٹ بال سٹار ڈینس روڈمین نے اس سے قبل انکشاف کیا تھا کہ جوڑے کی ایک بیٹی ہے جس کا نام انھوں نے جو اے رکھا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ کم ایک ’اچھے والد‘ ہیں۔

کم نے اس سے قبل کوموسین پیلس آف دی سن کا بھی دورہ کیا، جہاں ان کے والد اور دادا کی حنوط شدہ لاشیں رکھی ہوئی ہیں۔ انھوں نے ان کی برسی کے موقع پر پھولوں کی چادریں چڑھائیں۔ اس دن کو ’ڈے آف دی شائننگ سٹار‘ کہا جاتا ہے۔

ریاستی میڈیا نے ایک مرتبہ پھر کم کو ’صدر‘ کہا جو کہ روایتی سرکاری ٹائیٹل ’چیئرمین‘ سے انحراف ہے۔

صدر کا ٹائٹل گذشتہ ہفتے سب سے پہلے شمالی کوریا کی سینٹرل نیوز ایجنسی نے استعمال کیا تھا۔

عام طور پر شمالی کوریا میں صدر کا ٹائٹل کم جونگ ان کے دادا کم ال سنگ کے لیے مخصوص ہے جو ریاست کے بانی تھے۔

BBCUrdu.com بشکریہ
You might also like

Comments are closed.