جمعرات19؍ رجب المرجب 1442ھ4؍مارچ 2021ء

سندھ: 1302 ویکسینیٹر کی بھرتیاں غیر قانونی قرار

سندھ ہائی کورٹ نے نومبر 2019ء میں ہونے والی 1 ہزار 302 ویکسینیٹرز کی بھرتیوں کے خلاف درخواست کی سماعت کرتے ہوئے تمام ویکسینیٹرز کی بھرتیاں غیر قانونی قرار دے دیں۔

عدالتِ عالیہ نے ان اسامیوں پر نئے سرے سے دوبارہ انٹرویوز لینے کا حکم دے دیا۔

سندھ ہائی کورٹ نے حکم دیتے ہوئے یہ بھی کہا ہے کہ سندھ حکومت ویکسینیٹرز کے لیے ٹریننگ انسٹیٹیوٹ بھی قائم کرے۔

درخواست گزار نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ ویکسینیٹرز کی بھرتی کے لیے 2018ء میں اشتہار جاری کیا گیا تھا، جس کے سلسلے میں 60 سے کم نمبر حاصل کرنے والوں کو بھی یو سی کی سطح پر بھرتی کیا گیا۔

درخواست گزار کا یہ بھی کہنا تھا کہ این ٹی ایس ٹیسٹ میں 60 سے زائد نمبر لینے والوں کو بھرتی کیا جانا تھا۔

درخواست اختر حسین، قادر بخش اور دیگر کی جانب سے دائر کی گئی۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.