بدھ9؍شعبان المعظم 1442ھ24؍مارچ 2021ء

سندھ اسمبلی دھکم پیل، مکیش چاولہ ہیئرلائن فریکچر کا شکار

سندھ اسمبلی میں اجلاس کے دوران اراکین اسمبلی کی دھکم پیل کے دوران پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رہنما مکیش چاولہ زخمی ہوگئے تھے جو ہیئر لائن فریکچر کا شکار ہوگئے۔

سندھ اسمبلی میں اجلاس کے دوران پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین اسمبلی نے منحرف اراکین کی پٹائی لگادی۔

سندھ اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لیے تحریک انصاف کے منحرف ایم پی ایز سندھ اسمبلی پہنچے۔

اسمبلی میں ہونے والے واقعے پر ہمارے رکن پر تشدد ہوا تھا، اس پر ہمارے جذبات بہت ہائی تھے، رہنما پی ٹی آئی

کریم بخش گبول، شہریار شر اور اسلم ابڑو نے رجسٹر میں حاضری لگوائی، حکومتی اراکین نے تینوں ایم پی ایز کا استقبال کیا۔

تحریک انصاف کے منحرف ایم پی ایز کی آمد پر شدید ہنگامہ آرائی کی گئی، تحریک انصاف کے اراکین کی جانب سے باغی اراکین کی پٹائی بھی لگائی گئی۔

پی ٹی آئی اور پیپلزپارٹی کے ارکان بھی آپس میں گتھم گتھا ہو گئے جبکہ پیپلزپارٹی اراکین کی جانب سے تحریک انصاف کے اراکین کے درمیان بیچ بچاؤ کی کوشش بھی کی گئی۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین کی جانب سے منحرف ساتھیوں پر ایوان میں حملہ کیا گیا ہے۔

ویڈیو میں سندھ اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے دوران رکن پی ٹی آئی سعید آفریدی کو تے دیکھا بھی جاسکتا ہے۔

اس دوران صوبائی وزیر مکیش چاولہ کو زمین پر گرادیا گیا، جس کے باعث وہ شدید زخمی ہوگئے تھے، تاہم اب ایکسرے رپورٹ میں اس بات کی تصدیق ہوئی ہے کہ وہ ہیئر لائن فریکچر کا شکار ہوگئے ہیں۔

مکیش چاولہ نے بتایا انھیں پاؤں میں شدید تکلیف تھے جس کے باعث انھوں ایکسرے کروایا تھا۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.