منگل28رمضان المبارک 1442ھ 11؍مئی2021ء

دنیا بھر کے عمر رسیدہ ڈیم، خطرات کی علامت، اقوام متحدہ کی رپورٹ

اقوام متحدہ کی یونیورسٹی کے ایک تجزیہ کے مطابق سن 2050 تک زمین پر زیادہ تر لوگ دسیوں ہزار بڑے بڑے ڈیموں کے ٹوٹنے سے بہہ جائیں گے۔

یو این یو کے کینیڈا میں مقیم انسٹی ٹیوٹ برائے پانی ، ماحولیات اور صحت کی “ایجنگ واٹر انفراسٹرکچر: ایک ابھرتا ہوا عالمی خطرہ” کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دنیا بھر میں زیادہ تر 58،700 بڑے ڈیموں کو 1930 سے ​​1970 کے درمیان تعمیر کیا گیا تھا اور اس کی ڈیزائننگ لائف 50 سے 100 سال تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ 50 سال میں کئی ڈیم عمر بڑھنے کے آثار کا اظہار کرنا شروع کررہے ہیں۔

عمر رسیدہ ڈیم کی ناکامی کے بڑھتے ہوئے معاملات ڈیم کی مرمت اور بحالی کے بتدریج بڑھتے ہوئے اخراجات ، آبی ذخیرے میں تخریب کاری میں اضافہ ، اور ڈیم کی فعالیت اور تاثیر میں کمی خطرات کا اشارہ ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایسے ڈیم جن کی اچھی طرح سے ڈیزائننگ ، تعمیر اور دیکھ بھال ہورہی ہے وہ آسانی سے 100 سال کی خدمات گراہم کرسکتے ہیں لیکن ریاستہائے متحدہ اور یورپ میں تیزی سے ترقی پانے والے رجحان میں اضافے اور معاشی اور عملی حدود کے باعث ان پرانے ڈیموں کی اپ گریڈ متروک ہے۔

The post دنیا بھر کے عمر رسیدہ ڈیم، خطرات کی علامت، اقوام متحدہ کی رپورٹ appeared first on Urdu News – Today News – Daily Jasarat News.

بشکریہ جسارت
You might also like

Comments are closed.