منگل24؍رجب المرجب 1442ھ 9؍مارچ 2021ء

جسٹس قاضی فائز عیسٰی کا سوال، بلدیاتی انتخابات کیوں نہیں کرائے جا رہے؟

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان میں خیبر پختون خوا میں بلدیاتی انتخابات نہ کرانے کے معاملے کی سماعت کے دوران جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے سوال کیا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کیوں نہیں کرائے جا رہے؟

تفصیلات کے مطابق دورانِ سماعت سپریم کورٹ نے چیف الیکشن کمشنر، الیکشن کمیشن کے ممبران اور اٹارنی جنرل کو فوری طلب کر لیا گیا ہے جبکہ جسٹس قاضی فائز عیسٰی کا کہناتھا کہ اٹارنی جنرل اگر وزیرِاعظم کے ساتھ ہیں تو انہیں بتائیں آئین زیادہ اہم ہے۔

جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے استفسار کیا کہ بلدیاتی انتخابات کیوں نہیں کرائے جا رہے؟ ، عوام کو جمہوریت سے کیوں محروم رکھا جا رہا ہے؟

دوسری جانب جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا بلدیاتی انتخابات نہ کرا کے سپریم کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کی جارہی ہے  جس پر انہوں نے سوال کیا کہ کیا چیف الیکشن کمشنر اور ممبران نے اپنا حلف نہیں دیکھا؟ کیا چیف الیکشن کمشنر نے آئین نہیں پڑھا؟

واضح رہے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا یہ بھی کہنا تھا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے 18 نومبر 2020ء کو بلدیاتی الیکشن کرانے کا حکم دیا تھا۔

یاد رہے  الیکشن کمیشن نےصوبائی سیکرٹری بلدیات پر اظہار برہمی کرتے ہوئے واضح کیا تھا کہ کورونا میں اگر ضمنی انتخابات ہو سکتے ہیں تو بلدیاتی کیوں نہیں؟ الیکشن کمیشن نے 15 روز میں بلدیاتی انتخابات کی تاریخ سے آگاہ کرنے کی بھی ہدایت کر دی تھی۔

The post جسٹس قاضی فائز عیسٰی کا سوال، بلدیاتی انتخابات کیوں نہیں کرائے جا رہے؟ appeared first on Urdu News – Today News – Daily Jasarat News.

بشکریہ جسارت
You might also like

Comments are closed.