اتوار22؍ رجب المرجب 1442ھ 7؍مارچ2021ء

اسلام آباد ہائی کورٹ کی عدالتیں تا حکم ثانی بند، رجسٹرار اسلام آباد ہائی کورٹ

 وکلاء کی ہنگامہ آرائی کے بعد کاؤنٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) اور رینجرز کے اہلکار تعینات کردیئے گئے، احتجاجی وکلاء نے دعویٰ کیا ہے کہ ہمارے وکلاء کو گرفتار کیا گیا ہے۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے احتجاجی وکلاء سے کہا کہ آپ گرفتار وکلاء کے نام لکھ کر دیں، ایس پی کو ابھی آرڈر کرتا ہوں، جب تک آپ اپنا موقف ہمارے سامنے نہیں رکھیں گے مسئلہ حل نہیں کرسکتے۔

صدر اسلام آباد ہائیکورٹ بار چوہدری حسیب نے وکلاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ جو ہائیکورٹ کا آج نقصان ہوا ہے یہ میرا نقصان ہے، آپ لوگ اپنے مطالبات لکھ کر دیں میں ان کو حل کراؤں گا۔

چوہدری حسیب نے کہا کہ شور کریں گے تو گلہ نہ کرنا کہ ہمارا صدر ہمارے ساتھ نہیں ہے۔

وکلا نے نعرے بازی کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب ڈی سی حمزہ شفقات کا کام ہے اسے یہاں بلایا جائے۔

بشکریہ جنگ
You might also like

Comments are closed.