ہندو خاتون کا مسلمان کی خدمات لینے سے انکار

ہندو خاتون کا مسلمان کی خدمات لینے سے انکار

June 19, 2018 - 15:38
Posted in:

ٹوئٹر ہینڈل 'دی لیجنڈ' کا کہنا ہےکہ 'امید کرتا ہوں کہ پوجا سنگھ کبھی بیمار نہ ہوں ورنہ انھیں ہندو ایمبولنس ڈرائیور، ہندو ہسپتال، ہندو ڈاکٹر، ہندو نرس۔۔۔ کا انتظار کرنا ہوگا۔'تقریباً یہی باتیں اپریل میں بھی کہیں گئیں تھیں جب ابھیشیک مشرا نام کے ایک شخص نے اولا کمپنی کے ایک مسلمان ڈرائیور کی خدمات استعمال کرنے سے انکار کردیا تھا۔اسی ہفتے اولا نے ایک ڈرائیور کو برخاست کیا ہے جس نے ایک مسلمان مسافر کو دلی کے ایک ایسے علاقے تک پہچانےسے انکار کر دیا تھا جہاں ملسمانوں کی بڑی آبادی ہے۔اولا نے ایک بیان میں کہا کہ اس ڈرائیور کو ہٹا دیا گیا ہے۔ انڈیا کی طرح اولا بھی سیکولرزم میں یقین رکھتا ہے اور اپنے صارفین اور ڈرائیوروں کے ساتھ کسی قسم کے امتیاز کی اجازت نہیں دیگا۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}