ہمالیہ کے گلیشیئرز سے برف کہاں جا رہی ہے؟

ہمالیہ کے گلیشیئرز سے برف کہاں جا رہی ہے؟

June 21, 2019 - 10:23
Posted in:

سرد جنگ کے زمانے میں جاسوسی کرنے والی سیٹلائٹ سے لی گئی تصاویر کے مطابق ہمالیہ گلیشیئرز کی برف خطرناک حد ک پگھل گئی ہے جس سے گلوبل وارمنگ کے اثرات اب اور نمایاں ہو گئے ہیں۔ایک نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے امریکہ کی جانب سے فوجی حکمتِ عملی کے مشاہدے کے لیے تیار کردہ پُرانی تصاویر کا موازنہ حال ہی میں خلائی جہازوں سے لی گئی تصاویر سے کیا تو معلوم ہوا کہ گذشتہ 40 برسوں میں ہمالیہ کے پہاڑی سلسلے پر واقع گلیشیئرز میں برف کے پگھلنے کی رفتار دگنی ہو گئی ہے۔تحقیقی جریدے سائنس ایڈوانسز میں چھپنے والی اس تحقیق کے مطابق سنہ 2000 سے اب تک گلیشیئرز کی اونچائی ہر سال اوسطً آدھے میٹر تک کم ہوئی ہے۔محققین کا دعویٰ ہے کہ اس کی بنیادی وجہ موسمیاتی تبدیلی ہے۔یہ بھی پڑھیے’گلیشیئرز پنجاب کا بھی مسئلہ ہیں‘ایورسٹ کے گلیشیئرز میں سوراخ کرنے کا منصوبہموسمیاتی تبدیلی کے راز قطب جنوبی کے پانیوں میں ’سنہ 2100 تک ہمالیہ،ہندوکش کے 36 فیصد گلیشیئر ختم ہو جائیں گے‘نیو یارک میں کولمبیا یونیورسٹی کی لمونٹ ڈوہرٹی آرتھ ابزرویٹری کے جوشوا مورر نے بی بی سی کو بتایا کہ 'اس تحقیق سے ہم باآسانی جان سکتے ہیں کہ وقت کے ساتھ کس طرح ہمالیہ کے گلیشیئرز میں تبدیلی آئی ہے۔'سنہ 1970 اور سنہ 1980 کی دہائیوں میں امریکہ نے جاسوسی کے ایک پروگرام، جس کا کوڈ نیم ہیگزاگون تھا، کے تحت خلا میں 20 سیٹلائٹس بھیجے تھے۔ ان کا مقصد خفیہ طریقے سے زمین کے مختلف علاقوں کی تصاویر لینا تھا۔یہ خفیہ تصاویر فلم رولز کے ذریعے لی گئی تھیں، جن کو اس وقت سیٹلائٹ سے زمین کی جانب گرا کر آسمان کے بیچ و بیچ فوجی ہوائی جہازوں سے پکڑ لیا جاتا تھا۔اس تمام مواد کو سنہ 2011 میں منظرِعام پر لایا گیا۔ اس کے بعد ان تصاویر کو سائنسدانوں کے استعمال کے لیے امریکہ کے جیولوجی سروے نے ڈیجیٹلائز کیا۔

طویل مدت میں ان علاقوں کے لاکھوں لوگ، جن کا دار و مدار خشک سالی کے دوران گلیشیئرز سے پگھلنے والے پانی پر ہوتا ہے، مشکل میں پڑ سکتے ہیں۔اس تحقیق پر بات کرتے ہوئے بریٹش انٹارٹک سروے کے ڈاکٹر ہامش پریچرڈ نے کہا 'یہاں نئی بات یہ ہے کہ اب ہم دیکھ سکتے ہیں کہ کس طرح موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے کوہِ ہمالیہ میں گلیشیئرز پگھل رہے ہیں۔''ایک نسل کے بعد برف دوگنی رفتار سے پگھلنے لگ گئی ہے اور گلیشیئرز تیزی سے کم ہورہے ہیں۔''اس سے کیا فرق پڑے گا؟ جب برف ختم ہوجائے گی تو ایشیا کے سب سے اہم دریاؤں میں پانی کی ترسیل رُک جائے گی۔ یہ وہی پانی ہے جو خشک گرمیوں کے دوران ان دریاؤں میں بہتا ہے اور اس وقت یہ سب سے قیمتی ہوتا ہے۔''پہاڑوں پر موجود گلیشیئرز کے بغیر اُن لاکھوں لوگوں کے لیے خشک سالی بدتر ہوجائے گی جو دریا کے بہاؤ کے ساتھ بستے ہیں۔'

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}