ہائے ہماری مجبوریاں !!!

ہائے ہماری مجبوریاں !!!

October 02, 2018 - 08:53
Posted in:

جب سے پیدا ہوئے ہیں سنتے آ رہے ہیں کہ پاکستان ایک نازک دور سے گزر رہا ہے۔ یہاں سیاسی حکومتیں آئیں، بغیر مدت پوری کیے جاتی رہیں، مارشل لا آئے دس دس سال کا وقت گزار کر جاتے رہے، مسائل جوں کے توں رہے، معیشت کبھی نہ سنبھلی۔ آج بھی دہشت گردی کا سامنا ہے۔ پاکستان علاقائی تنہائی کا شکار ہے لیکن جس اہم معاشی دور سے ہم اس وقت گزر رہے ہیں، حالات شاید ایسے پہلے کبھی نا تھے۔پاکستان کو 20 ارب ڈالرز کی چنداں ضرورت ہے، کہاں سے لائیں بہت اہم سوال، اوپر سے ہمسائے نوچ کھانے کو تیار۔۔۔انڈیا مشرقی سرحدوں پر چھیڑ خانی شروع کر چکا ہے، حالانکہ حال ہی میں جب پومپیو صاحب پاکستان تشریف لائے تھے ہم نے دست بستہ عرض کیا تھا کہ جناب جس طرح افغانستان میں ہم سے کام لینا چاہتے ہیں لیں،، لیکن علاقائی ٹھیکیدار کو کنٹرول کریں اور مشرقی سرحد پر دباؤ کم کرائیں۔۔عاصمہ شیرازی کے کالم پڑھیےاب کی بار چال کس کی؟کیسا ہو گا نیا پاکستانگدھ، عقاب یا مُردار، ہم کیا ہیں؟دولے شاہ کے چوہےبلوچستان بنام جناب وزیراعظم پاکستان معاملہ اس کے بالکل برعکس ہوا۔ پومپیو کے روانہ ہوتے ہی انڈین آرمی چیف عرف 'ترچھی ٹوپی والے' نے سرجیکل سٹرائیکس کی تڑیاں لگانا شروع کر دیں۔ ہم نے کمال ضبط کا مظاہرہ کیا اور جواب میں صرف اتنا کہا کہ ہماری امن کی خواہش کو کمزوری نا سمجھا جائے۔۔۔ محض تین دن کے بعد جنرل راوت نے پھر دھمکی دے ڈالی۔۔ اور ہم نے پھر مذاکرات کی دعوت۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بھی سشما سوراج بمقابلہ شاہ محمود خوب رہا۔۔۔ دیکھیں یہ 'اِب کے مار' والی صورتحال کب تک جاری رہتی ہے۔

سابقہ حکومت کے غیردانشمندانہ معاشی فیصلوں نے نئی آنے والی حکومت کو بحرانوں کے بھنور میں دھکیل دیا ہے تو دوسری جانب گذشتہ ایک ماہ میں حکومت کی کارکردگی کی سمت اور فیصلے لایعنی محسوس ہو رہے ہیں۔ اور ایک طویل فہرست ایسے فیصلوں کی موجود ہے جس نے بہت کم وقت میں حکومت پر بے شمار تنقید کے دروازے کھولے ہیں۔ ملک واقعی نازک دور سے گزر رہا ہے اور اس نازک دور سے نکلنے کے لیے محض نعرے نہیں، قومی مفاد میں حقیقت پسندانہ اورعملی فیصلے کرنا ضروری ہیں۔چونکہ اب سب ادارے تاریخی ہم آہنگی حاصل کر چکے ہیں اور ایک ہی صفحے پر ہیں لہٰذا اب ناکامی بھی سب کی مشترکہ ہی تسلیم ہو گی اور یہی لمحہ فکریہ بھی ہے خاص کر کے اُن قوتوں کے لیے جو ہمیشہ سیاسی حکومتوں کو ناکامی کا سبب گردانتی رہی ہیں۔ ایسے میں کون بچائے گا پاکستان۔۔۔عمران خان۔۔۔عمران خان۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}