کابل: دو دھماکوں میں صحافیوں سمیت 25 افراد ہلاک

کابل: دو دھماکوں میں صحافیوں سمیت 25 افراد ہلاک

April 30, 2018 - 11:56
Posted in:

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ہونے والے دو بم دھماکوں میں کئی صحافیوں سمیت کم از کم 21 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ہلاک ہونے والوں میں فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی کی چیف فوٹو گرافر شاہ مری بھی شامل ہیں۔اطلاعات کے مطابق پیر کی صبح کابل کے علاقے شش درک میں ایک موٹر سائیکل سوار حملہ آور نے پہلا بم دھماکہ کیا۔اس کے 15 منٹ بعد دوسرا دھماکہ اس وقت ہوا جب جائے حادثہ پر کئی افراد اور صحافی جمع تھے۔یہ بھی پڑھیے٭ کابل حملہ: عورتوں اور بچوں سمیت 57 افراد ہلاک٭ ’طالبان افغانستان کے 70 فیصد علاقے کے لیے خطرہ‘خبررساں ادارے اے ایف پی نے نے کہا کہ دوسرا دھماکہ صحافیوں کو دانستہ طور پر نشانہ بنانےکے لیے کیا گیا تھا۔ششدرک ضلعے میں افغانستان کی وزارت دفاع، انٹیلی جنس سروس اور نیٹو کا احاطہ بھی تھا۔

@AFP کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

#UPDATE Agence France-Presse's chief photographer in Kabul, Shah Marai, has been killed.He died in a blast that was targeting a group of journalists who had rushed to the scene of a suicide attack in the Afghan capital pic.twitter.com/rOa4rg24x9 AFP news agency (@AFP) اپریل 30, 2018

@AFP کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

اس دھماکے میں درجنوں دوسرے افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔ابھی تک کسی نے بھی حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن افغانستان کے دارالحکومت میں بم دھماکے غیر معمولی بات نہیں ہیں۔اس سے قبل اپریل کے اوائل میں ایک خودکش بمبار نے ووٹر ریجسٹریشن مرکز پر دھماکہ کیا تھا جس میں تقریبا 60 افراد ہلاک جبکہ 119 افراد زخمی ہو گئے تھے۔ رواں سال بی بی سی کی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ملک میں دولت اسلامیہ اور طالبان سرگرم ہیں اور ملک کا صرف 30 فیصد علاقہ ہی پوری طرح سے حکومت کے کنٹرول میں ہے۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}