محکمہ تعلیم سندھ نے 14 ہزار اساتذہ کو مستقل کردیا

محکمہ تعلیم سندھ نے 14 ہزار اساتذہ کو مستقل کردیا

December 06, 2018 - 13:02
Posted in:

سندھ کے وزیر تعلیم سید سردارعلی شاہ کے احکامات پر عمل کرتے ہوئے محکمہ تعلیم نے امتحان پاس کرنیوالے ساڑھے 14 ہزار اساتذہ کو مستقل کردیا۔
وزیر تعلیم سید سردار علی شاہ کی زیر صدار ت محکمہ تعلیم کے اعلی سطحی اجلاس میں ریگیولرائز کرنے کے احکامات انہوں نے اس وقت دیے جب انہیں بریفنگ دی گئی کہ ان کے احکامات کے تحت 2012 کے این ٹی ایس پاس، پی ایس ٹی، جے ایس ٹی اور ایچ ایس ٹی اساتذہ کے تمام رکارڈ کی تصدیق کا عمل محکمے کی طرف سے مکمل کرلیا گیا ہے۔
 اجلاس میں این ٹی ایس، سندھ یونیورسٹی اور اقرا یونیورسٹی کے ٹیسٹ پاس کرنے والے اساتذہ کی ڈیٹا ویری فیکشن کا عمل مکمل کرنے کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ سیکرٹری اسکول نے بتایا کہ پورے صوبے سے این ٹی ایس پاس کرنے والے پی ایس ٹی، جے ایس ٹی اور ایچ ایس ٹی ٹوٹل 14 ہزار 6 سو 82 اساتذہ کا ریکارڈ موصول ہوا جن کے کاغذات کی مکمل چھان بین کے بعد 11 ہزار 7 سو 80 اساتذہ کا رکارڈ کی تصدیق کی گئی ہے۔
 ان میں حیدرآباد ریجن کے 2650، کراچی کے 1341، لاڑکانہ کے 2327، میرپورخاص کے 2052، شہید بینظیرآباد کے 1464 اور سکھر ریجن کے 1946 اساتذہ شامل ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ 2902 اساتذہ کا ریکارڈ نامکمل پایا گیا۔ انہوں نے نامکمل کاغذات کے حوالے سے تمام متعلقہ ڈاریکٹرز کو فی الفور احکامات دیے کہ مطلوبہ کاغذات کی فراہمی پر ہی تمام امیدواروں کو ریگیولر کیا جائے۔
 وزیر تعلیم سردار شاہ نے نامکمل رکارڈ بھیجنے پرمختلف اضلاع کے ڈاریکٹرز پر برہمی کا اظہار کیا اور انہیں تمام مطلوبہ ڈیٹا دو دن میں مکمل کرنے کی ہدایت کی اور حکم دیا کہ اس دوران وہ تمام تصدیق شدہ رکارڈ ہولڈر اساتذہ کا جمعے تک ریگیولر ازئیزیشن نوٹیفکیشن جاری کردیں۔
 سیکرٹری اسکول نے بتایا کہ مکمل رکارڈ کے تصدیق شدہ ٹوٹل 7689 پرائمری، 3755 جے ایس ٹی اور 336 ایچ ایس ٹیز کے جمعے تک ریگیولرائیزیشن آرڈر نکالے جائینگے۔ وزیر تعلیم سردار شاہ نے 2008 میں سندھ یونیورسٹی اور اس کے بعد اقراء یونیورسٹی کے ٹیسٹ پاس کرنے والے اساتذہ کی بھی ریگیولرائیزیشن کے معاملے میں درپیش مسائل فوری طور حل کرنے کی ہدایت کی۔
بشکریہ جسارتbody {direction:rtl;} a {display:none;}