سشما سوراج نے نفرت انگیز ٹویٹس ری ٹویٹ کیوں کیے؟

سشما سوراج نے نفرت انگیز ٹویٹس ری ٹویٹ کیوں کیے؟

June 25, 2018 - 09:59
Posted in:

انڈیا میں ایک مسلمان شخص سے شادی کرنے والی ہندو خاتون کا پاسپورٹ تنازع کا باعث بن گیا ہے اور اس سلسلے میں انڈیا کی وزیر خارجہ اور بی جے پی کی اہم رہنما سشما سوراج کو سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔جبکہ سشما سوراج نے قابل اعتراض ٹویٹس کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔ اتوار کو انھوں نے ایسے چند ٹویٹس کو ری ٹویٹ کیا ہے جس میں ان کے خلاف بدزبانی کی گئی تھی۔اس کے ساتھ ہی انھوں نے یہ بھی بتایا کہ جس دوران پاسپورٹ پر تنازع ہوا تھا اس وقت وہ بیرون کے دورے پر تھیں۔انھوں نے لکھا: ’میں 17 سے 23 جون کے درمیان انڈیا سے باہر تھی۔ میری غیر موجودگی میں کیا ہوا مجھے معلوم نہیں۔ بہر حال مجھے چند ٹویٹس سے نوازا گیا ہے۔ ان میں سے بعض کو میں آپ کے ساتھ شیئر کر رہی ہوں۔۔۔‘

خیال رہے کہ سشما سوراج سوشل میڈیا پر بہت فعال ہیں۔ فیس بک پر تقریباً 30 لاکھ افراد ان کے صفحے سے منسلک ہیں جبکہ ٹو‏ئٹر پر تقریباً ایک کروڑ 18 لاکھ لوگ انھیں فالو کرتے ہیں۔سشما سوراج ٹوئٹر کے ذریعے عام لوگوں کے مسائل کو حل کرنے کے لیے بھی معروف ہیں۔ انھوں نے پاکستان کے کئی لوگوں کی علاج کے سلسلے میں مدد کی ہے جسے شدید تنقید کا نشانہ بنایا گيا ہے۔سنگھ صاحب کے ٹوئٹر ہینڈل سے لکھا گیا: ’میں نے بھی لمبے عرصے تک ویزا ماتا (سشما سوراج کا مذاق اڑاتے ہوئے یہ لقب انھیں دیا گیا) کو ٹوئٹر پر فالو کیا۔۔۔ مجھے یاد نہیں کہ کسی ہندو کے ٹویٹ پر انھوں نے اس کا کوئی مسئلہ حل کیا ہو۔۔۔ لیکن مسلم چاہے وہ پاکستان کا مریض ہو اور ٹویٹ پر ویزا مانگ لے تو ویزا ماتا حاضر۔۔۔‘سوشل میڈیا پر سشما سوراج کی ایک تصویر بھی گردش کررہی ہے جس میں انھیں مدر ٹریزا کے انداز میں دکھایا گیا ہے اور دل سے پاکستان کی روشنی پھوٹ رہی ہے۔ اور اس کے ساتھ یہ لکھا ہے: ’میرا صرف ایک کام۔ انڈیا کی وزارت خارجہ میں بیٹھ کر پیارے پاکستانیوں کو ویزا تقسیم کرنا۔‘

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}