راؤ انوار کے سہولت کاروں کا بھی احتساب ہوگا،عدالت عظمیٰ

راؤ انوار کے سہولت کاروں کا بھی احتساب ہوگا،عدالت عظمیٰ

March 19, 2018 - 23:08
Posted in:

اسلام آباد(خبرایجنسیاں +مانیٹرنگ ڈیسک) چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار نے کہا ہے کہ راؤانوار کے سہولت کاروں کا بھی احتساب ہوگا، عدالت یہ جان کر ہی رہے گی ملزم کے سہولت کارکون لوگ ہیں۔پیر کو چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں عدالت عظمیٰ کے 3 رکنی بینچ نے نقیب اللہ محسود قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت کی۔چیف جسٹس نے کہا کہ راؤ انوار اب بھی عدالت آجائے گا تو تحفظ مل جائے گا اور بچ جائے گا۔انہوں نے ریمارکس دیے کہ راؤ انوار کو ائر پورٹ پر کس نے سہولت دی، پتا چلا تو ان کا احتساب بھی ہوگا۔ چیف جسٹس کی جانب سے بحریہ ٹاؤن کے نمائندے سے پوچھا کہ کیاراؤانوار کے لیے بحریہ ٹاؤن کاائرکرافٹ استعمال نہیں ہوا؟ کیاملک ریاض کی طرف سے بیان حلفی آیا؟ جس کے جواب میں نمائندے نے بتایا کہ ملک ریاض کابیان حلفی جمع کروادیاہے چیف جسٹس نے پوچھا کہ راؤانوار کوائرپورٹ پر کس نے سہولت دی؟ائرپورٹ پر راؤانوار کوکس نے پاس ایشو کیے جس کے جواب میں آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے بتایا کہ نجی ائرلائن کے بورڈنگ پاس جاری ہوئے۔بعد ازاں آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے راؤ انوار کی سی سی ٹی وی وڈیو پر عدالت عظمیٰ کو ان کیمراا بریفنگ دی۔ بریفنگ کے دوسرے مرحلے میں عدالت نے نجی ائرلائن کے حکام ،ڈی جی ایف آئی اے ،راؤ انوار کو بورڈنگ پاس جاری کرنے والے افسران اور چیئرمین نادرا کو بھی طلب کر لیا۔دوران سماعت گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ نے عدالت کو بتایا کہ راؤ انوار کے 2بینک اکاؤنٹس تھے دونوں کو منجمد کر دیا۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ تنخواہ بینک اکاؤنٹ میں ہی جارہی ہے؟ جس پر گورنر اسٹیٹ بینک نے بتا یا کہ جی سیلری بینک اکاؤنٹ میں ہی آرہی ہے مگر نکلوائی نہیں جاسکتی۔
بشکریہ جسارتbody {direction:rtl;} a {display:none;}