'حقائق یہ ہیں کہ مشرف نے میری والدہ کو قتل کیا‘

'حقائق یہ ہیں کہ مشرف نے میری والدہ کو قتل کیا‘

December 27, 2017 - 11:39
Posted in:

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وہ بینظیر بھٹو کے قتل کا ذمہ دار ذاتی طور پر سابق فوجی صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کو سمجھتے ہیں جنھوں نے حالات کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ان کی والدہ کو قتل کروایا۔پاکستان کی سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی دسویں برسی کے موقع پر ان کے بیٹے بلاول بھٹو زرداری نے بی بی سی کو خصوصی انٹرویو دیا جس میں انھوں نے اپنی والدہ کے قتل میں ملوث افراد کے بارے میں پہلی بار تفصیل سے اظہار خیال کیا۔اوئن بینٹ جونز سے خصوصی گفتگو میں انھوں نے کہا کہ وہ اس نوجوان لڑکے کو بینظیر کا قاتل نہیں سمجھتے جس نے 27 دسمبر سنہ 2007 کی شام راولپنڈی میں ان کی والدہ پر حملہ کیا تھا۔ 'مشرف نے صورتحال کا فائدہ اٹھاتے ہوئے میری والدہ کو قتل کروایا۔ اس دہشت گرد نے شاید گولی چلائی ہو، لیکن مشرف نے میری والدہ کی سکیورٹی کو جان بوجھ کر ہٹایا تاکہ انھیں منظر سے ہٹایا جا سکے۔'بلاول بھٹو کے مطابق پرویز مشرف نے بینظیر بھٹو کو براہِ راست دھمکی دی اور کہا کہ ان کے تحفظ کی ضمانت ان (مشرف) کے ساتھ تعاون پر منحصر ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ان کی والدہ ان کے لیے سیاست میں آنے کے بارے میں بہت زیادہ بات نہیں کرتی تھیں۔’میرا سیاسی کردار ان کے ساتھ بحث یا بات چیت کا حصہ کبھی نہیں رہا۔ اس وقت میری عمر اٹھارہ انیس سال تھی تو ہماری ساری توجہ یونیورسٹی میں میرے داخلے پر تھی۔ مجھے آکسفورڈ میں داخلہ ملنے پر وہ بہت خوش تھیں۔ آکسفورڈ کے بعد مجھے اعلیٰ تعلیم کے لیے کہیں اور جانا تھا، پھر مجھے نوکری کرنی تھی، پھر شادی اور خاندان سنبھالنا تھا۔ اور اس سب کے بعد اگر میری خواہش ہوتی تو مجھے پاکستانی سیاست میں آنا تھا۔ یہ بہت، بہت، بہت دور کی بات تھی۔'

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}