بھارت میں آئن اسٹائن اور نیوٹن کی تھیوریز مسترد

بھارت میں آئن اسٹائن اور نیوٹن کی تھیوریز مسترد

January 07, 2019 - 21:00
Posted in:

بھارتی سائنسدانوں کے مضحکہ خیز دعوے سامنے آئے ہیں، جس میں انہوں نے آئن اسٹائن اور نیوٹن کی تھیوريز کو یکسر مسترد کردیا ہے۔بھارتی سائنسدان اپنے حکمرانوں کی خوشامد میں اتنا آگے نکل گئے کہ اپنے خیالی مشاہدات کو ان کے ناموں سے منسوب کرڈالا۔جالندھر میں ہونے والی 106 ویں سائنس کانفرنس میں کہا گیا کہ آئن اسٹائن اور نیوٹن کی فزکس جلد ختم ہوجائے گی اور نئی ثقلی لہروں کا نام نریندرا مودی لہریں ہوگا۔بھارتی سائنسدان اپنے حکمرانوں اور سیاستدانوں کی خوشامد میں اتنے آگے نکل گئے کہ تاریخ جھٹلادی۔ دنیا کو آئی ٹی ماہرین کی بڑی تعداد فراہم کرنے والے بھارت میں نامور سائنسدانوں نے خوب شییخیا ں بگھاریں۔ تامل سائنسدان کنان جیگا تھلا کرشنان نے عالمی سطح پر مستند اور مصدقہ فزکس نظریات کو جھٹلاتے ہوئے کہا کہ فزکس کی مساوات کو حل کرنے میں نیوٹن اور آئن اسٹائن نے بہت بڑی غلطیاں کیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جدید فزکس صرف مختصر دور کے لئے ہے اور یہ مکمل طور پر تباہ ہوجائے گی، ان کے مشاہدات پر مبنی نئی فکر سامنے آئے گی۔ دعویٰ کرنے والے تامل ناڈو میں ’ورلڈ کمیونٹی سروس سینٹ‘ کے سینئر ریسرچ سائنسدان ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ آئن اسٹائن نے اپنی تھیوری کے متعلق دنیا کو گمراہ کیا۔کنان جیگا تھلا کرشنان نے کہا کہ خلا سور ج سمیت دیگرسب سیاروں پر بھاری ہے،اس لئے وہ تمام پر یکساں دباؤ رکھتی ہے، یکساں دباؤ کی وجہ سے یہ سیارے حرکت میں ہیں، یہی چیز نیوٹن اور آئن اسٹائن سمجھ نہیں پائے۔ انہوں نے یہ بھی دعویٰ کردیا کہ سائنس اور ٹیکنالوجی کے وزیر ہرش وردھان بھارت کے سائنسدان عبدالکلام سے بھی بڑے ہوںگے۔کانفرنس میں بھارتی سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ثقلی لہروں کا نیا نام ’نریندرا مودی لہریں‘ ہوگا ، رام اور کرشنا گائیڈڈ میزائل استعمال کیا کرتے تھے، بادشاہ کورو کی اولاد’ کورواس‘ اسٹیم سیل اور ٹیسٹ ٹیوب ٹیکنالوجی کی وجہ سے پیدا ہوئی، راون کے پاس مختلف شکلوں اور جسامت کے کئی جہاز تھے۔ بھارتی سائنسدانوں کے ان دعووں کو سوشل میڈیا پر آڑے ہاتھو ں لیا جارہا ہے کہ یہ سائنس کانفرنس ہے یا کامیڈی شو؟ خیال رہے کہ دنیا کے چوٹی کے 4 ہزار سائنسدانوں میں بھارت کے صرف 10 سائنسدان شامل ہیں۔ بشکریہ جنگbody {direction:rtl;} a {display:none;}