ایف اے ٹی ایف اجلاس میں پاکستان سے متعلق سفارشات کا جائزہ

ایف اے ٹی ایف اجلاس میں پاکستان سے متعلق سفارشات کا جائزہ

February 18, 2019 - 10:00
Posted in:

ایف اے ٹی ایف کے اہم گروپ آئی سی آر جی کے پہلے اجلاس میں پاکستان کے بارے میں ایشیا پیسیفک گروپ کی سفارشات کا جائزہ لیا گیا۔پاکستان پرامید ہے کہ گروپ کی سفارشات کی روشنی میں پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکالنے کی راہ ہموار ہو جائے گی۔ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کانام گرے لسٹ سے نکالنے کیلئے 27 نکات پرعمل درآمد کا کہہ رکھا ہے، پاکستان اہم نکات پرعمل درآمد کرکے اپنی رپورٹ گزشتہ ماہ سڈنی میں ہونےوالے ایف اے ٹی ایف کے اہم گروپ ایشیاپیسیفک میں جمع کروا چکا ہے۔ انٹر کنٹریز رسک گائیڈ یعنی آئی سی آر جی نے ان سفارشات کا جائزہ لینا شروع کر دیا ہے۔اجلاس کے پہلے روز پاکستان سے متعلق ایشیاء پیسیفک گروپ کی سفارشات کا جائزہ لیا گیا، اجلاس 22 فروری تک غور کے بعد اپنی سفارشات مرتب کرکے ایف اے ٹی ایف کوبھجوائے گا۔دہشت گردوں کی مالی مدد روکنے کے لیے قائم فنانشل ایکشن ٹاسک فورس مئی میں دوبارہ ان سفارشات کا جائزہ لے گی، ان سفارشات کی روشنی میں ستمبر میں اپنے اجلاس میں پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکالنے سے متعلق فیصلہ کرے گا۔پاکستان نے اپنے جواب میں بتا رکھا ہے کہ بین الااقومی معیار کے مطابق نظام متعارف کروایا ہے جس کے بعد بینکوں کے ذریعے مشکوک ترسیلات کی نشاندہی میں 75 فیصد بہتری آئی ہے۔ایئر پورٹس، بارڈر اور سمندری حدود پر رقوم کی اسمگلنگ روکنے کے لیے بھی انتظامات میں بہتری لائی گئی ہے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ پاکستان کی طرف سے کیے گئے اقدامات کی روشنی میں ایف اے ٹی ایف کے بعض یورپی ممالک نے پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکالنے کی سفارش کرنے کی یقین دہانی بھی کرا دی ہے۔بشکریہ جنگbody {direction:rtl;} a {display:none;}