امریکہ اور ایران کی بڑھتی ہوئی کشیدگی کا انجام کیا؟

امریکہ اور ایران کی بڑھتی ہوئی کشیدگی کا انجام کیا؟

June 28, 2019 - 05:58
Posted in:

ایران کے ساتھ کیا معاملہ کرنا ہے کیا امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اس حوالے سے کچھ سجھائی نہیں دے رہا؟ایران کے حوالے سے صدر ٹرمپ کا معیاری ضابطہ کار کیا ہے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے ڈیموکریٹک سینٹر ٹیمی ڈک ورتھ کا کہنا تھا کہ ’یہ (ضابطہ کار) ہماری قومی سلامتی کو خطرے میں ڈال رہا ہے۔‘حقیقت یہ ہے کہ گذشتہ ہفتے ایران کی جانب سے امریکی فوجی ڈرون گرائے جانے کے بعد صدر ٹرمپ نے کانگریس کے رہنماؤں سے رجوع کیا تھا کہ آیا وہ ایران کے خلاف کوئی جوابی عسکری کارروائی کریں یا نہیں۔ریپبلیکن رکنِ کانگرس مائیکل میک کال، جو کہ وہاں موجود تھے، نے مجھے بتایا کہ سیاسی حلیفوں اور حریفوں نے صدر ٹرمپ کو اس بارے میں اپنی اپنی آرا سے آگاہ کیا۔یہ بھی پڑھیےامریکہ، ایران اور خلیج: آگے کیا ہو سکتا ہے؟'اگر جنگ چھڑی تو ایران کا مکمل خاتمہ ہو جائے گا'ایران کے رہبر اعلیٰ آیت اللہ خامنہ ای پر امریکی پابندیاں ’ایران سے جنگ ہو گی یا نہیں سب ٹرمپ کے دماغ میں ہے‘مائیکل میک کال نے ایران کے حوالے سے وائٹ ہاؤس کی ایران پر حملہ نہ کرنے کی حکمت عملی کو ’متفقہ‘ قرار دیا۔اس انتہائی اہم دن ہوئے غور و فکر کے دوران صدر ٹرمپ نے امریکی فوجی جرنیلوں اور اپنے قومی سلامتی کی مشیران کو بھی سنا۔

آپ کو یاد ہے نہ شمالی کوریا کے ساتھ ان کے کیا معاملات ہوئے تھے۔ تاہم ایران کے خلاف ان کی مخالفت بہت سخت ہے۔موجودہ انتظامیہ خارجہ پالیسی میں بہت آگے نکل آئی ہے اور بہت سے وہ افسران جنھیں دنیا کی سمجھ بوجھ تھی وہ جا چکے ہیں۔واشنگٹن میں کئی لوگوں کو اس بات کا ڈر ہے کہ ایک ایسا شخص جسے اکثر حادثاتی صدر کہا جاتا ہے وہ مشرق وسطی میں ایک اور جنگ میں حادثاتی طور پر نہ کود پڑے۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}