’نئے میدان جنگ کے لیے سپیس فورس کے قیام کا وقت آ گیا ہے‘

’نئے میدان جنگ کے لیے سپیس فورس کے قیام کا وقت آ گیا ہے‘

August 10, 2018 - 05:10
Posted in:

امریکی نائب صدر مائیک پنس نے امریکی سپیس فورس کے منصوبے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ اب وقت آ گیا ہے کہ ’نئے میدان جنگ‘ کے لیے تیاریاں کی جائیں۔ سپیس فورس کے قیام کا حکم امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جون میں دیا تھا۔ انھوں نے کہا تھا کہ وزارت دفاع کے لیے ضروری ہے کہ وہ خلا میں کمزوریوں کا سامنا کرے اور امریکی غلبے کو یقینی بنائے۔ ہماری انفارمیشن فوج موثر پروپیگنڈہ میں ملوث ہے‘ٹرمپ کا امریکی فوج کو خلائی فورس کی تشکیل کا حکمتاہم سپیس فورس کا قیام اتنا آسان نہیں ہے کیونکہ اس کے قیام کے لیے کانگریس کی منظوری کی ضرورت ہے۔ کانگریس میں کئی ممبران نے اس فورس کے قیام پر آنے والے تخمینے اور بیوروکریسی کے حوالے سے تحفظان کا اظہار کیا ہے۔ تاہم مائیک پنس نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ یہ فورس ٹرمپ انتظامیہ کے پہلے دورِ حکومت کے اختتام سے قبل قیام میں آ جائے یعنی 2020 تک۔

صدر ٹرمپ اس سے قبل بھی آرمڈ فورسز سے بات کرتے ہوئے سپیس فورس کے بارے میں بات کر چکے ہیں۔ اور سابق وزیر دفاع ڈونلڈ رمزفیلڈ نے سنہ 2000 میں یہ آئیڈیا تھا لیکن اس کا کچھ نہیں بنا۔ ٹرمپ اور ان سے پہلے بھی سپیس فورس کے قیام کی باتیں ہو چکی ہیں اور اس خیال کے حامیوں کا کہنا ہے کہ سپیس فورس کے قیام سے پینٹاگون کو بہت فائدہ ہو گا۔ تاہم سینیئر ملٹری حکام نے اس خیال کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا ہے۔ 2017 میں کانگریس کو ایک بریفنگ میں امریکی فضائیہ کے سربراہ جنرل ڈیوڈ گولڈفن نے کہا تھا کہ سپیس فورس کا قیام ہمیں غلط سمت میں لے جائے گا۔ یاد رہے کہ خلا سے متعلق فوجی کارروائیوں کی نگرانی امریکی فضائیہ کرتی ہے۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}