’میرے کپتان۔۔۔ کمال کر دیا!‘

’میرے کپتان۔۔۔ کمال کر دیا!‘

November 01, 2018 - 14:26
Posted in:

وزیراعظم عمران خان کے گذشتہ روز خطاب پر جہاں ان کی جرات مندی کا سلام پیش کیا جا رہا وہیں ا ن پر ان کے ماضی کے بیانات اور تقریروں کےحوالے دے کر شدید تنقید کی جا رہی ہے۔عمران نے اپنی تقریر میں دھرنے اور احتجاج کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ 'ریاست سے نہ ٹکرائیں۔ اپنی سیاست اور ووٹ بینک کے چکر میں ملک کے خلاف کام نہ کریں۔ ریاست کو مجبور نہ کریں کہ وہ ایکشن لینے پر مجبور ہو جائے۔'اس تقریر کو جہاں 'تاریخی' قرار دیا جا رہا ہے اور یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ 'پہلی بار کسی صاحبِ اختیار نے اس طرح کھُل کر اس معاملے پر سخت لائن اختیار کی ہے۔'’ریاست کو مجبور نہ کیا جائے کہ اس کو کارروائی کرنی پڑے’حزب اختلاف کان کھول کر سن لے، این آر او نہیں ملے گا‘اینکر شاہذیب خانزادہ نے لکھا 'وزیراعظم عمران خان کی کیا زبردست اور بامقصد تقریر۔ ان سارے متعصب افراد کے لیے واضح پیغام جو پاکستان کو غیر مستحیکم کرنا چاہتے ہیں۔'

@shazbkhanzdaGEO کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@shazbkhanzdaGEO کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

سیٹھ عبداللہ نے لکھا کہ 'جس نرم انداز میں عمران خان نے احتجاج کرنے والوں سے اپیل کی ہے یہی انداز ہونا چاہیے ایک وزیراعظم کا۔ کسی بھی وزیراعظم نے ایسا اس سے قبل نہیں کیا اور اتنی جلدی سے نہیں جیسا انہوں نے کیا۔ عمران خان میں ہمت ہے پاکستان کے دشمنوں کے منہ پر بات کرنے کی۔'شہباز تاثیر نے ٹویٹ کی 'وزیراعظم عمران خان کی ایک بڑی تقریر۔ اللہ ان کی اور ہم سب کی حفاظت فرمائے۔'

@MunizaeJahangir کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@MunizaeJahangir کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

منیزے جہانگیر نے لکھا 'خوشی ہے کہ عمران خان نے تقریر کی جس میں انہوں نے ریاست کی رِٹ پر متعصب افراد کی وجہ سے سمجھوتہ نہ کرنے پر زور دیا۔ وہ اپنے اُس موقف سے بہت دور آئے ہیں جب انہوں نے کہا تھا کہ وہ لبیک کے مسلم لیگ ن کے خلاف دھرنے میں شامل ہوں گے۔ امید کرتی ہوں کہ حکومت اپنے کہے پر عمل کرے گی کیونکہ قوم اُن سے توقع رکھتی ہے۔'مگر ٹوئٹر پر ایسے بے شمار ناقدین بھی ہیں جو حکومت اور عمران خان کے موقف پر شدید تنقید کر رہے ہیں۔جیسا کہ عاطف توقیر نے لکھا ’خدا کا شکر ہے کہ اس وقت #PTI اپوزیشن میں نہیں اور عمران خان خود وزیراعظم ہیں، ورنہ دوسری صورت میں اس وقت پاکستان کسی 'خانہ جنگی' کا منظر پیش کر رہا ہوتا۔ پیپلز پارٹی، نون لیگ اور دیگر سیاسی جماعتوں کا خادم رضوی معاملے کو استعمال نہ کرنا درست عمل ہے۔‘

@atifthepoet کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@atifthepoet کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

مرتضیٰ سولنگی نے لکھا 'اچھے بھلے لوگ کل سے کہہ رہے کہ میں اپنے بہادر وزیر اعظم کے ساتھ ہوں۔ اس نے کون سی بہادری دکھائی ہے؟ اس نے یہ بہادری دکھائی ہے کہ جو بات ہم کل کہہ رہے تھے وہ آج کہہ رہا ہے؟ بہادری تب ہوتی جب وہ کہتا کہ میں کل غلط تھا اور آپ لوگ ٹھیک کہتے تھے۔ یا وہ کل غلط تھا یا آج غلط ہے۔'عمر نے لکھا 'یہی عمران خان جس نے ختمِ نبوت کا کارڈ چند مہینے قبل استعمال کیا؟ یہی عمران خان جن کی جماعت کے سرکردہ لیڈر رضوی کے دھرنے میں شریک ہوئے؟ یہی عمران خان جس نے اپنے مخالفیں کو گستاخ اور غدار کے القابات سے نوازا؟'

@TalatHussain12 کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@TalatHussain12 کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

سید طلعت حسین نے لکھا 'مفلوج کرنے والے احتجاج کی خبروں کے بلیک آؤٹ سے کام نہیں چلے گا۔ ہم میں کچھ نے پہلے ہی خبردار کیا تھا کہ جن کو بوتل سے باہر نہ نکالیں۔ تو ہمارا مذاق اڑایا گیا، ٹرولنگ ہوئی۔ اب جب جن بوتل سے باہر آ چکا ہے وہ بھی ملک کے تشخص اور عوام ی زندگی پر اثرات کے ساتھ تو اب وہی جو بویا تھا کاٹنا پڑے گا۔'میورِک علی نے لکھا 'آج وزیر اعظم عمران خان نے سپریم کورٹ کے ججوں' اور 'آرمی چیف' کے خلاف سنگین الزامات نیشنل ٹی وی پر دہرا کر انتہائی غیر ذمہ داری کا ثبوت دیا ہے۔ کیا عمران خان اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ کوئی دُہری گیم کھیلنا چاہ رہے ہیں تاکہ سانپ بھی مر جائے اور لاٹھی بھی نہ ٹوٹے؟ آپ بتائیں۔'سابق وفاقی وزیر خواجہ آصف نے لکھا کہ 'عمران خان نے تشدد، تفرقہ اور نفرت کے جو بیج بوئےآج پوری قوم اس کی فصل کاٹ رہی ہے۔ اور پتہ نھیں خدانخواستہ کتنی نسلیں اس کی قیمت چکائیں گی۔'

@UmarCheema1 کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@UmarCheema1 کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

عمر چیمہ نے تو یہاں تک لکھا کہ 'وزیراعظم عمران خان کی اپوزیشن لیڈر عمران خان پر کڑی تنقید۔'صحافی ابصار علم نے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ 'یہ مکافات عمل ہے! جب سیاستدانوں پر ایسے الزامات لگائے جا رہے تھے اور کچھ اینکرز لوگوں کو تشدد پہ اُکساتے اور پیمرا قانونی کاروائی کرنے کی کوشش کرتا تو یہی سب پیمرا کو ناکام بناتے۔ ہم سمجھاتے تھے لیکن تکبر اور بے وقوفی نے اپنی ناک سے آگے دیکھنے نہ دیا۔ آج یہ آگ ہر طرف پھیل گئی۔'

@AbsarAlamHaider کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ

@AbsarAlamHaider کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں

اور منصور احمد نے لکھا '‏آج اگر ابرار الحق جیسا کام احسن اقبال کرتا، عثمان ڈار جیسا رویہ خواجہ آصف دکھاتا، مذہبی معاملے پر عمران جیسی نواز شریف دکھاتا یا شیخ رشید جیسی مولانا فضل الرحمن دکھاتا تو ہمارے بڑبولے بھائی گھروں سے باہر نہ نکل پاتے۔ سوچیں اگر عمران کو بھی اس جیسی ابن الوقت اپوزیشن ملتی۔'اور بہت سے لوگ ماضی کو بھلا کر حال میں اس متعصبانہ رویے کے خلاف متحد ہونے کی بات کر رہے ہیں جیسے ریحان الحق نے لکھا 'پی ٹی آئی کے 2017 میں تحریکِ لبیک کے دھرنے کے بارے میں موقف کو اب سامنے لانے کا کوئی فائدہ نہیں۔ اب جبکہ عمران خان اور ان کے حواری ان لوگوں کے خلاف کھڑے ہو رہے ہیں تو ان کی حمایت کریں۔ اس ملک کو ماضی کی وجہ سے سزا نہ دیں۔ امید کرتا ہوں کہ ریاست اس بار مضبوطی سے قائم رہے گی۔'

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}