’شوہر سے چھپ کر دوا کھانے کا سوچا تاکہ حاملہ نہ ہو جاؤں‘

’شوہر سے چھپ کر دوا کھانے کا سوچا تاکہ حاملہ نہ ہو جاؤں‘

September 20, 2017 - 18:39
Posted in:

div class="story-body" style="direction:rtl;"

div class="with-extracted-share-icons"

/button
/div
/li
/ul/div

/div
/div
/div
/div

div class="story-body__inner" property="articleBody"
figure class="media-landscape has-caption full-width lead"span class="image-and-copyright-container"

img class="js-image-replace" alt="لارا" src="https://ichef-1.bbci.co.uk/news/320/cpsprodpb/13B87/production/_97857708..." style="width=100%; max-width=640;"

/span

/figurep class="story-body__introduction"'مجھے اپنے پیٹ میں کسی بھی بھاری چیز کے آنے کے خیال سے ڈر لگتا ہے' /ppیہ کہنا ہے 26 برس کی سیمینتھا کا۔/ppسیمنتھا ’ٹوکوفوبیا‘ کی مریض ہیں۔ اس مرض سے متاثر خواتین کو حمل اور بچہ پیدا کرنے کے عمل سے گزرنے سے ڈر لگتا ہے۔ ماہرین کے مطابق دنیا میں تقریباً 14 فیصد خواتین ایسی ہیں جنہیں اس طرح کا ڈر ستاتا ہے۔ /ppa href="/urdu/science-37856898" class="story-body__link"حمل ضائع ہونے سے اعصابی تناؤ کا خطرہ/a/ppسیمینتھا بتاتی ہیں 'میرے ذہن میں یہ ڈر ہمیشہ بیٹھا رہتا ہے۔ حاملہ خواتین کو دیکھ کر میں گھبرا جاتی ہوں۔ یہاں تک کہ حمل یا بچہ پیدا کرنے کی بات سن کر ہی مجھے پسینا آنے لگتا ہے۔ میں ڈر سے کانپنے لگتی ہو۔'/pfigure class="media-landscape has-caption full-width"span class="image-and-copyright-container"

/span

/figurepسوفی کا خیال ہے کہ اس کی وجہ اس خاتون کے ساتھ ماضی میں ہوا کسی طرح کا استحصال، ذہنی تکلیف یا ماضی کے برے تجربات ہو سکتے ہیں۔/ppایلیکسیا بھی اس تکلیف سے گزر چکی ہیں لیکن اب وہ دوسری عورتوں کو اس بارے میں بتاتی ہیں اور ان کی اس ڈر سے نجات پانے میں مد کرتی ہیں۔ /ppa href="/urdu/37758104" class="story-body__link"بچی جو دو بار پیدا ہوئی/a/ppانہوں نے کہا کہ 'ہمیں بچوں کی پیدائش سے متعلق مشکل سے ہی کوئی اچھی خبر پڑھنے کو ملتی ہے۔ میں میڈیا کو بھی مدد کے لیے آگے آنے کو کہہ رہی ہوں۔'/pp26 سالہ بیکی کا مشورہ ہے کہ ٹوکوفوبیا سے متاثرہ خواتین کی مدد کے لیے ادارے ہونے چاہیں۔ یہ عام مرض ہے اور اس سے باہر نکلا جا سکتا ہے۔/p
/div
/div
div style="direction:rtl;"BBCUrdu.com بشکریہ/divbrbrstylebody {direction:rtl;} a {display:none;}/style