’اسقاطِ حمل کی گولیوں کی آن لائن تلاش میں دوگنا اضافہ‘

’اسقاطِ حمل کی گولیوں کی آن لائن تلاش میں دوگنا اضافہ‘

June 14, 2018 - 07:59
Posted in:

بی بی سی کو گوگل سرچ کے تجزیے سے معلوم ہوا ہے کہ گذشتہ ایک دہائی سے زائد عرصے میں عالمی سطح پر اسقاط حمل کے لیے گولیوں کی آن لائن تلاش میں دوگنا اضافہ ہوا ہے۔ان اعداد و شمار سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جن ممالک میں اسقاط حمل سے متعلق قوانین زیادہ سخت ہیں وہیں اسقاط حمل کی گولیاں زیادہ آن لائن تلاش کی جاتی ہیں۔ان گولیوں کی آن لائن خریدنے اور واٹس ایپ گروپس کے ذریعے طبی مشاورت کی سہولت کی وجہ سے خواتین بڑی تعداد میں اسقاط حمل پر عائد پابندیوں سے بچنے کے لیے ٹیکنالوجی کا سہارا لے رہی ہیں۔’اسقاطِ حمل میری زندگی کا سب سے بھیانک خواب تھا‘یہ ’ڈی آئی وائے ابورشن‘ کا جدید چہرہ ہے۔بی بی سی کے تجزیے سے معلوم ہوتا ہے کہ مسوپروسٹول نامی گولی ان ممالک میں دس گنا زیادہ آن لائن سرچ کی جاتی ہے جہاں قوانین سخت ہیں اور صرف خواتین کی جان بچانے کے لیے ہی اسقاط حمل کی اجازت ہے یا اس پر مکمل پابندی ہے، بہ نسبت ان ممالک کے جہاں اس پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ اسقاط حمل کے دو طریقے ہیں، آپریشن کے ذریعے یا ادویات کے ذریعے۔

تمام اسقاط حمل میں سے تقریباً 14 فیصد ’کم محفوظ‘ ہوتے ہیں، جس کا مطلب ہے کہ انھیں غیر تربیت یافتہ افراد سے خطرناک طریقہ کار کے تحت کروایا جاتا ہے۔انفیکشن اور نامکمل اسقاط حمل جیسی پیچیدگیاں ایسے طریقہ کاروں کی وجہ سے اپھرتی ہیں۔ جب کوئی اسقاط حمل نامکمل ہوتا ہے تو طبی ماہرین یا تو مزید ادویات کا مشورہ دیتے ہیں یا پھر آپریشن کا کہتے ہیں، اس کا انحصار صورتحال پر ہوتا ہے۔گٹمیچر انسٹیٹیوٹ کی رپورٹ کے مطابق کم از کم 22800 خواتین ہر سال غیرمحفوظ اسقاط حمل کی پیچیدگیوں کی وجہ سے مر جاتی ہیں۔تمام سرچ ڈیٹا جس کا استعمال کیا گیا ہے وہ گذشتہ پانچ سالوں کا ہے اور گوگل ٹرینڈز سے حاصل کیا گیا ہے، جو سرچ کی صحیح تعداد مہیا نہیں کرتا، لیکن 0-100 کے درمیان کسی موضوع پر سرچ کے بارے میں بتاتا ہے، کسی بھی موضوع، وقت اور علاقے کے حوالے سے سرچ کے نتائج میں 100 بلند ترین ہے۔ مختلف زبانوں یا ادویات کے مختلف ناموں سے سرچ (مثال کے طور پر۔ ’ابورشن پلز‘، ’مسوپروسٹول‘ یا ’سیٹوٹیک‘) اس ڈیٹا میں شامل ہیں۔ مجموعی ٹرینڈز کے لیے ہم نے عالمی سرچ ڈیٹا کا جائزہ لیا، اور 14 ممالک کو تفصیل سے دیکھا: گھانا، نائجیریا، ہونڈروس، بولیویا، ایکواڈور، نکراگوا، کینیا، میکسیکو، امریکہ، کولمبیا، برازیل، ارجنٹینا، انڈیا اور آئرلینڈ۔ ہر ملک میں اسقاط حمل کے قوانین کا ڈیٹا سینٹر فار ریپروڈکٹیو رائٹس سے حاصل کیا گیا۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}