ویسٹ انڈیز ورلڈ کپ کے لیے براہِ راست کوالیفائی کرنے میں ناکام

ویسٹ انڈیز ورلڈ کپ کے لیے براہِ راست کوالیفائی کرنے میں ناکام

September 20, 2017 - 10:56
Posted in:

div class="story-body" style="direction:rtl;"

div class="with-extracted-share-icons"

/button
/div
/li
/ul/div

/div
/div
/div
/div

div class="story-body__inner" property="articleBody"
figure class="media-landscape no-caption full-width lead"span class="image-and-copyright-container"

img class="js-image-replace" alt="کرکٹ" src="https://ichef-1.bbci.co.uk/news/320/cpsprodpb/18157/production/_97874689..." style="width=100%; max-width=640;"

/span

/figurep class="story-body__introduction"دو دفعہ کی عالمی چیمپیئن ویسٹ انڈیز کی ٹیم انگلینڈ کے خلاف ایک روزہ سیریز کا پہلا میچ ہارنے کے بعد 2019 کے ورلڈ کپ میں براہ راست رسائی حاصل کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔/ppویسٹ انڈیز کی ہار کا فائدہ سری لنکا کو پہنچا جو کہ آٹھویں اور آخری براہ راست پوزیشن حاصل کر کے ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی کر گئی ہے۔ /ppa href="/urdu/sport-40259351" class="story-body__link"پاکستان کی 2019 ورلڈ کپ میں رسائی یقینی/a/ppa href="/urdu/sport-39333599" class="story-body__link"ورلڈ کپ تک رسائی ، ویسٹ انڈیز کی سیریز اہم ہے ، سرفراز /a/ppانٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے ضوابط کے مطابق ورلڈ کپ میں براہ راست کوالیفائی کرنے کی آخری تاریخ 30 ستمبر تھی لیکن انگلینڈ سے شکست کے بعد ویسٹ انڈیز اپنے 78 پوائنٹس میں اگلے دس دنوں میں اتنا اضافہ نہیں کر سکتی جس سے وہ سری لنکا کے 86 پوائنٹس کو عبور کر لے۔ /ppانگلینڈ کے خلاف جاری سیریز میں ویسٹ انڈیز کو کم از کم 4-0 یا 5-0 صفر سے کامیابی حاصل کرنی تھی۔ /ppاس شکست کا مطلب ہے کہ 1975 اور 1979 کی ورلڈ کپ کی فاتح ویسٹ انڈیز کو عالمی کپ میں شامل ہونے کے لیے آئی سی سی کے دس ملکی ورلڈ کپ کوالیفائنگ مقابلوں میں شرکت کرنی ہوگی۔ /ppاس ٹورنامنٹ میں ویسٹ انڈیز کا سامنا افغانستان، زمبابوے، آئرلینڈ اور دیگر ٹیموں سے ہوگا۔ اس ٹورنامنٹ میں پہلی دو پوزیشن حاصل کرنے والی ٹیمیں انگلینڈ میں کھیلے جانے والے 2019 ورلڈ کپ کا حصہ بن سکیں گی۔ /ppیہ ٹورنامنٹ اگلے سال انگلینڈ میں 30 مئی سے 15 جولائی تک کھیلا جائے گا۔ /ppادھر سری لنکا کی ایک روزہ ٹیم کے کپتان اپل تھرانگا نے آئی سی سی سے بات کرتے ہوئے ورلڈ کپ میں براہ راست رسائی حاصل کرنے پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ 'اس بات میں کوئی شک نہیں ہے کہ ہماری ٹیم ابھی مشکل دور سے گزر رہی ہے لیکن میں اپنی ٹیم کے شائقین کا شکر گزار ہوں کہ انھوں نے اس مشکل مرحلے میں ہمارا ساتھ دیا۔'/ppانھوں نے کہا کہ آئی سی سی ٹورنامنٹس میں ان کی ٹیم ہمیشہ اچھا کھیل پیش کرتی ہے اور وہ مستقبل میں بھی ایسا کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ /p
/div
/div
div style="direction:rtl;"BBCUrdu.com بشکریہ/divbrbrstylebody {direction:rtl;} a {display:none;}/style