وزارت تجارت تجارتی پالیسی کی بنیاد میں وسعت لانے کی خواہاں

وزارت تجارت تجارتی پالیسی کی بنیاد میں وسعت لانے کی خواہاں

November 09, 2017 - 20:51
Posted in:

کراچی (اسٹاف رپورٹر )ملک کی برآمدات کو فروغ دینے کے لیے وزارت تجارت پاکستان کی تجارتی پالیسی کی بنیاد میں وسعت لانے کی خواہاں ہے۔ اس کے ساتھ برآمدات پر مبنی صنعتوں کو سہولت اور انہیں فروغ دینے کے لیے اقدامات بھی کیے جائیں گے۔ ڈائریکٹر جنرل ٹریڈ پالیسی، وزارت تجارت نعمان اسلم نے اس امر کا اظہار ’پاکستان کی برآمدات سے متعلق مقابلے کی اہلیت کا حصول‘ کے موضوع پر پالیسی ادارہ برائے پائیدار ترقی (ایس ڈی پی آئی) کے زیر اہتمام مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ دی ورلڈ بینک گروپ (ڈبلیو بی جی) کے ساتھ وابستہ سینئر معیشت دان گونزالو جے واریلا نے ترقی پذیر ممالک کی معاشی نمو میں تجارت کی اہمیت پر تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ پاکستان اپنی برآمدات سے متعلق اہلیت سے بھر پور فائدہ اٹھانے میں ناکام رہا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عالمی منڈیوں میں مقابلے کی اہلیت بہتر بنانے کے لیے کاروبار کی لاگت میں کمی لانی ہو گی۔ سینئر معیشت دان نادیہ روچا نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں جارت سے متعلق پالیسیوں میں ہم آہنگی کا فقدان رہا۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان میں میں تجارت کے لیے سہولت کاری اور نقل و حمل کو بہتر بنانا ہو گا۔ ایس ڈی پی آئی کے ڈپٹی ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر وقار احمد نے اس سے قبل تجارت کے حوالے سے مجموعی ملکی صورت حال پر روشنی ڈالی اور کہا کہ پاکستان میں کاربار کرنے سے لے کر تجارتی دستاویز بندی تک ، لاگت مد مقابل کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں توانائی کی لاگت میں کمی اور وفاقی و صوبائی ٹیکسوں میں ہم آہنگی پیدا کرنا بے حد ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ برآمدات میں اضافے کے لیے نجی و سرکاری شعبے کو مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔
بشکریہ جسارتbody {direction:rtl;} a {display:none;}