ورکنگ باؤنڈری پر انڈیا کی فائرنگ، چھ پاکستانی شہری ہلاک

ورکنگ باؤنڈری پر انڈیا کی فائرنگ، چھ پاکستانی شہری ہلاک

September 22, 2017 - 12:11
Posted in:

پاکستانی فوج کے مطابق ورکنگ باؤنڈری پر انڈین فوج کی فائرنگ سے کم از کم چھ پاکستانی شہری ہلاک اور 26 زخمی ہو گئے ہیں۔پاکستانی فوج کے شعبۂ تعلقات عامہ کی جانب سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق ہلاک شدگان میں چار خواتین جبکہ زخمیوں میں 15 خواتین اور پانچ بچے بھی شامل ہیں۔'ایل او سی پر فائرنگ سے تین شہری زخمی': آئی ایس پی آرایل او سی پر انڈیا کی گولہ باری، چار پاکستانی شہری زخمیآئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے ٹوئٹر پر ایک بیان میں کہا کہ انڈین فوج نے امن کے عالمی دن کے موقع پر ورکنگ باؤنڈری کے چھپر، ہرپال اور چارواہ سیکٹر میں فائرنگ کی جس سے عام شہری ہلاک اور زخمی ہوئے۔بیان میں مزید کہا گیا کہ انڈین فوج نے ورکنگ باؤنڈری پر بلااشتعال فائرنگ کی۔آئی ایس پی آر کے بیان کے مطابق پنجاب رینجرز نے انڈیا کی جارحیت کا بھرپور جواب دیا اور ورکنگ باؤنڈری کو نشانہ بنانے والی انڈین چوکیوں پر فائرنگ کی۔واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے بھی بھارتی فوج کی ورکنگ باؤنڈری پر بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری سے دو افراد ہلاک ہوئے تھے۔انڈیا کی جانب سے ورکنگ باؤنڈری پر فائرنگ کا یہ واقعہ پاکستان کے وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی کے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی میں دیے جانے والے بیان کے بعد سامنے آیا ہے۔شاہد خاقان عباسی نے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر انڈیا نے ایل او سی کو پار کرنے کی کوشش کی یا پاکستان کے خلاف ’محدود جنگ‘ کی پالیسی پر عملدرآمد کیا تو اس کا بھر پور جواب دیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان انڈیا سے مذاکرات کے لیے تیار ہے لیکن 'مذاکرات کے لیے انڈیا کو پاکستان میں شدت پسند کارروائیوں کی معاونت ترک کرنا ہو گی بشمول پاکستان کی مغربی سرحد سے۔'

خیال رہے کہ دونوں ممالک کے درمیان انڈیا کے زیر انتظام کشمیر کے علاقے اوڑی میں ستمبر 2016 میں فوج کے کیمپ پر حملے کے بعد سے تعلقات زیادہ کشیدہ ہو گئے تھے۔اس حملے کے بعد انڈین فوج نے پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں سرجیکل سٹرائک کرنے کا دعویٰ کیا تھا جسے پاکستان نے مسترد کر دیا تھا۔اس کے بعد انڈیا اور پاکستانی فوج نے متنازع کشمیر کو تقسیم کرنے والی لائن آف کنٹرول پر ایک دوسرے کی ایک ایک چوکی تباہ کرنے کا دعویٰ کیا تھا اور دونوں جانب سے ثبوت کے طور پر ویڈیو بھی جاری کی گئی تھی۔اس کے علاوہ جون میں پاکستانی فوج نے دعویٰ کیا تھا کہ لائن آف کنٹرول پر انڈین فورسز کی فائرنگ کے جواب میں پاکستانی کارروائی سے پانچ انڈین فوجی مارے گئے جبکہ اس واقعے سے پہلے انڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ پاکستانی فوج نے گشت کرنے والی فوجی پارٹی پر حملہ کر کے دو فوجیوں کو ہلاک اور ان کی لاشیں مسخ کر دی ہیں۔ تاہم پاکستانی فوج نے ان دعوؤں کو جھوٹ پر مبنی قرار دیا تھا۔دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کی ایک وجہ مبینہ انڈیا جاسوس کلبھوشن جادھو کو اپریل میں آرمی ایکٹ کے تحت سنائی گئی سزائے موت کا معاملہ بھی ہے۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}