نانا پاٹیکر کے خلاف جنسی ہراس کا مقدمہ درج

نانا پاٹیکر کے خلاف جنسی ہراس کا مقدمہ درج

October 11, 2018 - 18:37
Posted in:

بالی وُڈ اداکارہ تنوشری دتہ کی درخواست پر ممبئی کی پولیس نے مشہور اداکار نانا پاٹیکر سمیت بالی وڈ کی چار شخصیات کے خلاف جنسی ہراس کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔فوجداری قوانین کی شق 354 اور 509 کے تحت نانا پاٹیکر کے علاوہ جن دیگر افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے ان میں ڈانس ڈائریکٹر گنیش اچاریا، فلم ڈائریکر راکیش سارنگ اور پرودڈیوسر سمیع صدیقی شامل ہیں۔'میرے ساتھ جنسی زیادتی ہوئی ہے' کیا یہ کہنا آسان ہے؟یہ چاروں افراد ’ہارن او کے‘ کے نام سے دو ہزار آٹھ میں بننے والی فلم کا حصہ تھے جس میں تنوشری دتہ پر ایک گانا ریکارڈ کیا گیا جس کے بارے میں تنوشری کا موقف ہے کہ اس گانے کے کچھ مناظر فلمبند کرانے میں ان کی رضامندی شامل نہیں تھی۔

. ایک ٹوئٹ میں سبھاش کپور کا کہنا تھا کہ ’چونکہ معاملے عدالت میں ہے، اس لیے میری خواہش ہے کہ اپنی بے گناہی بھی عدالت میں ہی ثابت کروں۔ تاہم میں ایک سوال ضرور اٹھانا چاہوں گا۔ آیا کسی روتی ہوئی خاتون کی اجازت اور اُس کے جانے بغیر اس کی فلم بنا کر سوشل میڈیا پر ڈالنا ہراساں کرنے کے مترادف نہیں؟ (یا آپ کے خیال میں) چونکہ اس خاتون کا تعلق ایک ایسے شخص سے ہے جس پر نامناسب رویے کا ’الزام‘ ہے تو ایسا کرنا جائز ہے۔ اگر آپ کا جواب ہاں میں ہے تو میرے خیال میں یہ بات کھاپ پنچائتی ذہنیت سے کم نہیں۔‘‘

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}