فیض کی نظم 'ہم دیکھیں گے' پر انڈیا میں تنازع

فیض کی نظم 'ہم دیکھیں گے' پر انڈیا میں تنازع

July 08, 2018 - 13:07
Posted in:

فیض کی نظم 'ہم دیکھیں گے' ان دنوں انڈیا کے معروف ادارے فلم اینڈ ٹیلی ویژن انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا (ایف ٹی آئی آئی) میں تنازع کا باعث بنی ہوئی ہے۔خبروں کے مطابق حکام نے ایف ٹی آئی آئی کی عمارت میں قائم ہوسٹل میں رہنے والے دو طالب علموں کو وہاں سے نکل جانے کا نوٹس دیا۔ انڈین میڈیا میں شائع خبر کے مطابق ان دونوں نے دیوار پر 'ہم دیکھیں گے' لکھا تھا جسے حکام نے 'دھمکی آمیز'، 'ونڈلزم' اور 'دیوار کو خراب کرنا' قرار دیا ہے۔جب بی بی سی نے پونے میں قائم ادارے ایف ٹی آئی آئی کی طلبہ یونین کے جنرل سیکریٹری روہت کمار سے رابط کیا تو انھوں نے بتایا کہ 'کل پورے دن کے دھرنے اور بات چیت کے بعد حکام نے نوٹس کو ہولڈ پر رکھ لیا ہے لیکن کہا ہے کہ آئندہ ایسی حرکت ہوئی تو بخشا نہیں جائے گا۔'انھوں نے بتایا کہ انتظامیہ نے پہلے کہا کہ 'صرف اسی وقت ان لوگوں کو جاری کی جانے والی نوٹس واپس لی جائے گی جب وہ تحریری معافی نامہ لکھیں اور دیوار پر بنائی گریفٹی پر سفیدی کریں۔'

عمر خالد کے ساتھ مجیب گٹو اور انربان بھٹاچاریہ کو بھی یونیورسٹی سے نکالنے کا فیصلہ برقرار رکھا گیا ہے۔ یہ سزا کل یعنی نو جولائی سے نافذ العمل ہوگی۔اس سے قبل علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں طلبہ یونین ہال میں بانی پاکستان محمد علی جناح کی ایک تصویر مہینوں تنازعے کا باعث رہی تھی۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}