'بھیڑیں انسانی چہروں کو پہچان سکتی ہیں'

'بھیڑیں انسانی چہروں کو پہچان سکتی ہیں'

November 08, 2017 - 18:01
Posted in:

ایک مطالعے سے یہ معلوم ہوا ہے کہ بھیڑیں انسانی چہروں کو پہچاننے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔کیمبرج یونیورسٹی کے محققوں نے بھیڑوں کو چہرے شناخت کرنے کی تربیت دی جس میں انھوں نے اداکار جیک جِلن ہال، ایما واٹسن، سابق امریکی صدر براک اوباما اور بی بی سی نیوز ریڈر فیونا بروس کی شناخت کروائی۔تربیت کے بعد بھیڑوں نے بے شمار غیر مانوس چہروں کے درمیان اکثر و بیشتر مانوس چہروں کی شناخت کر لی۔یہ بھی پڑھیں٭ ننھے منے جانوروں کے جذبات کی عکاسی٭ ’گوگل لینز‘ کتنے کمال کی چیز ہے؟٭ یادداشت کھو جانے والی خاتون کا سراغاس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ بھیڑوں میں انسان اور بندر کی طرح چہروں کو شناخت کرنے کی صلاحیت موجود ہے۔اس سے پہلے کی گئی ایک تحقیق میں یہ معلوم ہوا تھا کہ بھیڑیں اپنی ساتھی بھیڑوں اور اپنے ساتھ رہنے والے انسانوں کو پہچانتی ہیں۔'اوپن بائیولوجی' نامی جریدے میں شائع ہونے والی اس تحقیق کے سربراہ پروفیسر جینی مورٹن نے کہا 'اس میں ہم نے یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا بھیڑیں تصویر سے کسی کو پہچان سکتی ہیں۔

اس تحقیق میں آٹھ ویلش ماونٹن بھیڑوں کو غیر مانوس چہروں میں سے چار مشہور شخصیات کی تصویر کو پہچاننے کی تربیت دی گئی۔ ان کی پہچاننے کی صلاحیت کی جانچ کر لینے کے بعد محققوں نے یہ جاننے کی کوشش کی کہ آیا وہ اسی شخص کی کسی دوسرے زاویے سے لی گئی تصویر کو پہچانتی ہیں یا نہیں۔اور ان کی پہچاننے کی صلاحیت توقع سے بہتر نکلی۔اور آخر میں محققوں نے یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا یہ بھیڑ اپنی دیکھ بھال کرنے والے کو تصویر سے پہچان سکتی ہیں۔اس کی جانچ کے لیے غیر مانوس چہروں کے درمیان ان کی دیکھ بھال کرنے والوں کی تصاویر بھی سکرین پر دکھائی گئیں۔اس معاملے میں بھی بھیڑوں نے مایوس نہیں کیا۔ان نتائج سے پتہ چلا کہ بھیڑوں کی چہرے پہچاننے کی صلاحیت بندر، لنگور اور انسان کی طرح ہی ہے۔محققوں کا خیال ہے کہ یہ جاننا دلچسپ ہوگا کہ چہرے کی طرح کیا بھیڑیں انسانی چہروں پر جذبات کے مختلف اظہار کو پہچان سکتی ہیں؟اس تحقیق سے اعصاب کے کمزور پڑجانے والی پارکنسن یا ہٹنگٹن جیسی بیماریوں کی تحقیق میں مدد مل سکتی ہے۔

BBCUrdu.com بشکریہbody {direction:rtl;} a {display:none;}